تحریک عدم اعتماد، سپیکر کی قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کے شعبہ قانون سے مشاورت

64

اسلام آباد: سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے وزیراعظم پاکستان عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد کے معاملے پر اسمبلی سیکرٹریٹ کے شعبہ قانون سازی سے مشاورت کی ہے۔
تفصیلات کے مطابق اسد قیصر نے رائے طلب کی کہ کیا منحرف ارکان کو ووٹ ڈالنے سے روکا جاسکتا ہے؟ جس پر سپیکر کو جواب ملا کہ کسی بھی رکن کو ووٹ ڈالنے سے نہیں روک سکتے اور اس حوالے سے قانون واضح ہے۔ 
ذرائع نے بتایا کہ شعبہ قانون سازی نے اپنے جواب میں مزید کہا ہے کہ آئین کا آرٹیکل 63 ون اے بالکل واضح ہے تاہم پارٹی پالیسی کی خلاف ورزی پر بعد میں کارروائی ہو سکے گی۔ 
سپیکر نے پوچھا کہ پارٹی قیادت کی جانب سے مشکوک ارکان کے نام آئیں تو کیا ایکشن ہوسکتا ہے؟ جس پر انہیں بتایا گیا کہ پارٹی چیئرمین سے باضابطہ ڈکلیئرنیشن کے بعد سپیکر کا کردار شروع ہوتا ہے۔ 
سپیکر قومی اسمبلی نے مزید پوچھا کہ کیا منحرف اراکین سے متعلق ووٹنگ سے پہلے رولنگ دی جاسکتی ہے؟ اس پر جواب دیا گیا کہ رولنگ دینا سپیکر کا اختیار ہے، تاہم اس پر آئین و قانون واضح ہے۔

تبصرے بند ہیں.