download (1)

جنگی جنون میں مبتلا مودی کا دفاعی بجٹ میں اضافہ

ئی دلی :  جنگی جنون میں مبتلا بھارت نےے نئے مالی سال 2018-19 کا یونین بجٹ پیش کردیا ، حکومت کی جانب سے جی ڈی پی کی شرح نمو 7 اعشاریہ 2 سے 7 اعشاریہ 5 فیصد رکھی گئی ہے۔ نئے بجٹ میں دیہی علاقوں کیلئے خصوصی فنڈز مختص کیے گئے ہیں جبکہ صحت اور دفاع کیلئے بھی بڑی رقم رکھی گئی ہے۔بھارتی وزیر خزانہ ارون جیٹلی نے لوک سبھا میں 3 اعشاریہ 3 فیصد خسارے کا یونین بجٹ پیش کیا۔ مالی سال 2018-19 کیلئے دفاعی بجٹ میں 7 اعشاریہ 81 فیصد اضافہ کردیا ہے ۔ رواں مالی سال کے بجٹ میں دفاع کی مد میں 2 لاکھ 95 ہزار 511 کروڑ روپے رکھے گئے ہیں جو کہ حکومتی اخراجات کا 12 اعشاریہ 10 فیصد ہے۔ بجٹ میں دیہی علاقوں کے انفراسٹرکچر کی بہتری کیلئے 14 اعشاریہ 34 لاکھ کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں جبکہ نیشنل ہیلتھ پروگرام کے تحت ہر خاندان کو 5 لاکھ روپے سالانہ دینے کی بھی منظوری دی گئی ہے۔ بجٹ میں ٹیکسٹائل سیکٹر کیلئے 7 ہزار 148 کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں ، پٹرولیم مصنوعات پر عائد ایکسائز ڈیوٹی میں بھی کمی کی گئی ہے جس کے بعد ان کی قیمتوں میں 2 روپے کی کمی آجائے گی، سولر پینلز کی قیمتیں بھی کم کردی گئی ہیں۔ بھارت کے یونین بجٹ میں سونا، چاندی اور ہیروں کی قیمتیں بڑھادی گئی ہیں جبکہ سگریٹ اور لائٹر کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوا ہے، بجٹ میں موبائل فون پر کسٹم ڈیوٹی 15 فیصد سے بڑھا کر 20 فیصد کردی گئی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *