تھانہ چکری کی حدود میں قبضہ مافیا اور پولیس میں شدید جھڑپیں

2

راولپنڈی: تھانہ چکری کی حدود میں قبضہ مافیا کے مسلح ملزمان اور پولیس میں شدید جھڑپیں ہوئیں اور جدید ہتھیاروں سے لیس ملزمان 2 گھنٹے تک پولیس پر فائرنگ کرتے رہے جبکہ جوابی فائرنگ میں ایک ملزم ہلاک 2 زخمی حالت میں گرفتار کر لئے گئے۔ 
تفصیلات کے مطابق پولیس کا کہنا ہے کہ تھانہ چکری کی حدود میں بڑے رقبے پر قبضے کی اطلاع ملی تھی جس پر پولیس نفری موقع پر پہنچی تو جدید ہتھیاروں سے لیس ملزمان نے پولیس پر فائرنگ شروع کر دی، ملزمان غیر قانونی بنکرز سے مسلسل دو گھنٹے تک فائرنگ کرتے رہے جبکہ حالات کی کشیدگی دیکھتے ہوئے راولپنڈی کے 10 تھانوں کی نفری اور ایلیٹ کمانڈوز کی 8 سکیشنز کو موقع پر طلب کیا گیا۔ 
ذرائع کے مطابق ایس ایس پی آپریشنز وسیم ریاض کی نگرانی میں ہونے والے آپریشن میں ایس پی صدر محمد نبیل کھوکھر نے بھی حصہ لیا، پولیس کا کہنا تھا کہ ملزمان کی تعداد اور فائرنگ کو دیکھتے ہوئے بکتر بند گاڑی کو بھی موقع پر روانہ کیا گیا، دو گھنٹے سے جاری فائرنگ تبادلے میں ایک ملزم ہلاک جبکہ دو کو زخمی حالت میں گرفتار کیا گیا۔ 
پولیس ترجمان کا کہنا تھا کہ ملزمان سے جھڑپ میں تمام پولیس اہلکار محفوظ رہے، سی پی او سید شہزاد ندیم بخاری نے آپریشن میں موجود تمام پولیس اہلکاروں کو بلٹ پروف ہیلمٹس اور جیکٹس استعمال کرنے کی ہدایت کی تھی، پولیس نے نجی ہاوسنگ سوسائٹی میں قائم غیر قانونی بنکرز اور ڈیرے ہیوی مشینری کی مدد سے مسمار کر دئیے جبکہ اندھیرے کے باعث کل تک سرچ آپریشن کو ملتوی کیا ہے۔ 

تبصرے بند ہیں.