تحریک انصاف اصلاحات میں ناکام ،گورنر بنا کر سائیڈ لائن کردیا گیا: چودھری سرور

169

 

لندن : برطانیہ کے دورے پر گئے گورنر پنجاب چودھری محمد سرور کا کہنا ہے کہ میں سینیٹ کا رکن تھا گورنر بننے کی خواہش نہیں تھی لیکن پارٹی نے رسمی عہدہ دے کر سائیڈ لائن کردیا جس کا بعد میں پتا چلا۔

 

لندن میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے گورنر پنجاب نے کہا کہ کام کا عہدہ دیا جاتا تو ڈلیور کرسکتا تھا ، اپنے دائرہ اختیار میں آنے والے کام خوش اسلوبی سے ادا کرنے کی کوشش کررہا ہوں۔

 

انہوں نے کہا کہ پاکستان کا المیہ ہے کہ شخصیات کے پیچھے بھاگتے رہے اور ادارے مضبوط نہیں کیے۔  انہوں نے اعتراف کیا کہ ہم پولیس اور عدلیہ میں اصلاحات کرنے میں ناکام رہے ہیں، پولیس، عدلیہ اور پراسیکیوشن میں بڑے پیمانے پر اصلاحات کی ضرورت ہے۔

 

چوہدری سرور کا کہنا تھا کہ ملک کا بوسیدہ نظام عوام کے مسائل حل کرنے سے قاصر ہے، 1122 کو بہترین ریسکیو سروس میں تبدیل کردیا ہے، اس کا نظام برطانیہ کے نظام سے بھی بہتر ہے۔

 

چودھری سرور نے بتایا کہ نواز شریف دور میں ہم نے اوورسیز پنجاب کمیشن بنایا تھا جو بہترین کام کر رہا ہے اور اس نے 18000 درخواستوں میں سے 8 ہزار درخواستیں حل کردی ہیں۔

تبصرے بند ہیں.