پی پی رکن اسمبلی نے میرا ہاتھ مروڑا، لگتا ہے میری انگلی فریکچر ہوئی ہے: غزالہ سیفی

38

اسلام آباد: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی رکن قومی اسمبلی غزالہ سیفی نے کہا ہے کہ قومی اسمبلی میں پیش آنے والے ٓآج کے واقعے پر میں بہت افسردہ ہوں، پی پی رکن اسمبلی نے میرے ہاتھ کو مروڑا، لگتا ہے میری انگلی فریکچر ہوئی ہے۔ 
نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے غزالہ سیفی کا کہنا تھا کہ ایسا لگتا ہے قومی اسمبلی میں جاہلوں کا لشکر آ گیا ہے، ہم یہاں پر عوام کے حقوق کی بات کرنے کیلئے آتے ہیں اور لوگ ہم پر رشک کرتے ہیں کہ ہم عوامی نمائندے ہیں، اجلاس کے دوران پی پی رکن اسمبلی نے میرے ہاتھ کو مروڑا، لگتا ہے میری انگلی فریکچر ہوئی ہے۔
غزالہ سیفی نے کہا کہ ہماری کوئی گفتگو نہیں ہورہی تھی خواتین مردوں کی طرف آ گئی تھیں اور کاغذ پھاڑ کر وزیر خزانہ کی طرف پھینک رہی تھیں، میں نے ایسا کرنے سے منع کیا تو خاتون رکن اسمبلی نے میرے اوپر ہاتھ اٹھایا اور میرا ہاتھ بھی مروڑا۔ انہیں لڑائی جھگڑے کا اتنا ہی شوق ہے تو سڑکوں پر جاکر جھگڑے کریں، سمجھ نہیں آ رہا کہ یہ لوگ آئے کہاں سے ہیں، ان لوگوں نے کہاں پڑھا ہے۔
غزالہ سیفی نے مزید کہا کہ جب انہوں نے میرے اوپر ہاتھ اٹھایا تو میں نے اپنے دفاع کیلئے ان پر جواب میں ہاتھ اٹھایا، کیونکہ میں خاموش نہیں رہ سکتی تھی، انہوں نے میرا ہاتھ زور سے مروڑا، مجھے لگتا ہے کہ میری انگلی فریکچر ہو گئی ہے۔ 

تبصرے بند ہیں.