بغداد خود کش دھماکا، داعش نے ذمہ داری قبول کر لی، ہلاکتیں 30 تک جا پہنچیں

206

بغداد: داعش نے بغداد میں خود کش دھماکے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے، اس افسوسناک دھماکے میں جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 30 ہو گئی ہے۔

داعش نے عراقی دارالحکومت بغداد کی مصروف مارکیٹ میں عید سے ایک دن قبل ہونے والے خود کش دھماکے کی ذمہ داری قبول کر لی ہے۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق بغداد کے مشرقی علاقے الصدر سٹی میں پیر کی رات ہونے والے اس خود کش دھماکے کے نتیجے میں 30 افراد جاں بحق اور 35 زخمی ہو گئے تھے۔

داعش کی طرف سے اس کے ٹیلی گرام چینل پر پوسٹ کئے گئے پیغام میں کہا گیا ہے کہ ابو حمزہ العراقی نامی ان کے رکن نے الصدر سٹی میں خود کش حملہ کیا۔

یہ حملہ اس وقت کیا گیا جب لوگوں کی بڑی تعداد عید الاضحیٰ کے لئے خریداری میں مصروف تھی۔ رپورٹ کے مطابق دھماکہ اس قدر شدید تھا کہ متاثرہ جگہ پر انسانی اعضا بکھرگئے ۔ غیر مصدقہ اطلاعات کے مطابق دھماکے میں زخمی ہونے والوں کی تعداد 50 بتائی گئی ہے۔

عراق کے صدر برہام صالح نے دھماکے کو گھنائونا فعل قرار دیا ہے اور اس میں جاں بحق ہونے والوں کے لواحقین سے تعزیت کا اظہار کیا ہے۔ محکمہ صحت کے حکام کے مطابق خود کش دھماکے میں مارے جانے والوں میں 8 خواتین اور 7 بچے بھی شامل ہیں۔

تبصرے بند ہیں.