کوئٹہ میں گیس سپلائی تاحال معطل، ایل پی جی 400 روپے کلو میں فروخت ہونے لگی

4

کوئٹہ: صوبائی دارالحکومت کوئٹہ اور دیگر علاقوں میں گیس کی سپلائی تاحال معطل ہے جبکہ ایل پی جی 400 روپے فی کلو میں فروخت کی جا رہی ہے۔ 
تفصیلات کے مطابق کوئٹہ شہر میں سوئی گیس کی سپلائی معطل ہونے کی وجہ سے ایل پی جی سلنڈر کی دکانوں پر رش بڑھ گیا ہے اور دکانداروں نے طلب بڑھنے پر گیس کے نرخ میں من مانا اضافہ کر دیا ہے۔
ذرائع کے مطابق کوئٹہ میں ایل پی جی فی کلو 300 روپے تک میں فروخت کی جا رہی ہے جبکہ نواحی علاقوں اور دیہاتوں میں ایل پی جی 400 روپے فی کلو میں بھی فروخت کی جا رہی ہے۔
اس کے علاوہ بلوچستان کے مختلف شہروں میں بجلی کے ٹاور گرنے کے باعث بجلی بند ہے جبکہ وزیراعظم کی ہدایت کے باوجود کچھ علاقوں میں موبائل فون نیٹ ورک سروس بھی متاثر ہے۔
واضح رہے کہ گزشتہ دنوں بولان کے علاقے بی بی نانی میں گیس پائپ لائن ریلے میں بہہ جانے کے سبب کوئٹہ کو گیس کی فراہمی معطل ہو گئی تھی۔ 
سوئی سدرن گیس حکام کا کہنا تھا کہ برساتی ریلے میں گیس پائپ لائن بہہ جانے سے مچ شہر کے علاوہ زیارت، پشین، مستونگ اور قلات کو بھی گیس کی فراہمی بند ہے۔ 
گیس کمپنی حکام کا کہنا ہے کہ شکارپور سے کوئٹہ آنے والی 24 انچ گیس پائپ لائن پہلے ہی بہہ چکی ہے جبکہ بولان ندی میں پانی کم ہونے کے بعد گیس پلائن کی مرمت کی جائے گی۔ 

تبصرے بند ہیں.