مقبوضہ کشمیر :مندر میں بھگدڑ سے 12 افراد ہلاک متعدد زخمی

25

سرینگر:  مقبوضہ جموں کشمیر میں ہندو مذہب کے اہم ترین مندر  میں بھگدڑ مچنے سے 12 افراد ہلاک اور 13 زخمی ہو گئے۔

 غیر ملکی میڈیا کے مطابق  مقبوضہ جموں کشمیر میں ہفتہ کی صبح  ہندو  مذہب کی عبادت گاہ ‘ویشنو دیوی مندر’  میں بھگدڑ مچنے سے 12 افراد ہلاک اور 13 زخمی ہو گئے۔یہ مندر ہندو مذہب میں سب سے زیادہ قابل احترام ہندو عبادت گاہوں میں سے ایک ہے جہاں ہر روز ہزاروں  لوگ عبادت کرنے آتے ہیں۔

 حکام کے مطابق ہلاکتوں کی تعداد میں مزید اضافے کا خدشہ ہےکیونکہ  مندر کو جانے والا راستہ عبادت گزاروں سے بھرا ہوا تھا ، اسی دوران بھگدڑ مچنے کا واقعہ پیش آگیا، ہندو عبادت گزار  نئے سال کی روایتی عبادات اور دعاؤں کیلئے مندر کا رخ کر رہے تھے۔

ڈیزاسٹر مینجمنٹ کے اہلکار نے ہلاکتوں کی تعداد کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ بھگدڑ کا واقعہ تقریباً رات دو بجکر 45 منٹ پر پیش آیا، انہوں نے کہا کہ مندر پر بھگدڑ کے واقعہ کی حکومت کی طرف سے اعلیٰ سطحی انکوائری کا حکم دیا گیا ہے۔

بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی نے واقعے میں جانوں کے ضیاع پر انتہائی دکھ کا اظہار کیا، انہوں نے مزید کہا کہ وہ مقامی حکام سے رابطے میں ہیں۔ مودی نےسوگوار خاندانوں سے تعزیت کرتے ہوئے زخمیوں کی جلد صحت یابی کیلے دعا کی۔

تبصرے بند ہیں.