پاکستان میں اومی کرون کے 75 کیسز کی تصدیق

26

اسلام آباد: قومی ادارہ صحت نے پاکستان میں اومی کرون کے 75 کیسز کی تصدیق کر دی جبکہ تمام مریضوں کو قرنطینہ کر دیا گیا ہے۔

 

قومی ادارہ صحت کی رپورٹ کے مطابق اسلام آباد 17، کراچی میں 33 اور لاہور میں اومی کرون کے 13 کیسز سامنے آئے ہیں۔

 

رپورٹ کے مطابق اومی کرون کے 12 کیسز بیرون ملک سے آنے والے افراد میں پائے گئے جب کہ تمام مریضوں کو قرنطینہ کر دیا گیا ہے۔

 

یاد رہے کہ چند روز قبل مائیکروسافٹ کے بانی بل گیٹس نے خبردار کیا تھا کہ اومیکرون سب کے گھروں پر دستک دینے والا ہے۔

 

بل گیٹس نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر صارفین کو خبردار کیا کہ لوگ اب وبائی مرض کے بدترین مرحلے میں داخل ہو سکتے ہیں اور کورونا کا نیا وائرس اومیکرون ویریئنٹ سب کے گھروں پر دستک دینے والا ہے۔ ایسا لگ رہا تھا زندگی معمول پر آ جائے گی لیکن اب ہم وبائی مرض کے بدترین دور سے داخل ہو رہے ہیں۔

 

بل گیٹس نے مزید کہا کہ میں نے چھٹیوں کے اپنے بیشتر منصوبے منسوخ کر دیے ہیں کیونکہ میرے قریبی دوست اومیکرون کی وجہ سے تیزی سے متاثر ہو رہے ہیں۔

 
انہوں نے کہا کہ اومیکرون ویرینٹ پہلے کے کورونا وائرس سے زیادہ تیزی سے پھیل رہا ہے اور یہ جلد ہی دنیا کے ہر ملک کو اپنی لپیٹ میں لے لے گا۔ ابھی تک یہ ظاہر نہیں ہوا کہ اومیکرون آپ کو کس حد تک بیمار کر سکتا ہے تاہم ہمیں اسے سنجیدگی سے لینے کی ضرورت ہے۔

 

بل گیٹس نے کہا کہ جب تک اس نئے ویریئنٹ کے بارے میں تفصیلات سامنے نہیں آ جاتیں ہمیں اسے کم خطرناک نہیں سمجھنا چاہیے۔ انہوں نے لکھا کہ عالمی ادارہ صحت کے ڈی جی ٹیڈروس ایڈہانم گبریس پہلے ہی کہہ چکے ہیں کہ زندگی ختم کرنے سے بہتر ہے کہ چھٹیاں ختم کر دیں۔

 

تبصرے بند ہیں.