سینیٹ کی 30 نشستوں پر  الیکشن کے لیے پولنگ  جاری، 59 امیدوار مدمقابل

18

اسلام آباد:ملک بھر میں سینیٹ کی 30 نشستوں پر  الیکشن کے لیے پولنگ  جاری ہے، پولنگ صبح 9 بجے سے شام 4 بجے تک ہوگی۔

 

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے سینیٹ انتخابات کے لیے امیدواروں کی حتمی فہرست جاری کردی ہے، پنجاب کی 7 جنرل نشستوں اور بلوچستان کی 7 جنرل اور 2 خواتین نشستوں پر امیدوار بلامقابلہ سینیٹر منتخب ہوگئے جن میں سابق نگراں وزیراعظم انوار الحق کاکڑ، محسن نقوی، پرویز رشید، احد چیمہ، طلال چوہدری اور دیگر شامل ہیں۔

 

 

اسلام آباد کی 2 نشستوں کے لیے 4 امیدوار مدمقابل ہیں، اسلام آباد سے ٹیکنوکریٹ کی نشست پر مسلم لیگ (ن)کے اسحٰق ڈار، جنرل نشست پر پیپلز پارٹی کے رانا محمود الحسن امیدوار ہیں، پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ انصر محمود ٹیکنو کریٹ نشست پر اور فرزند حسین شاہ جنرل نشست پر انتخاب لڑیں گے۔

 

پنجاب اسمبلی کی 12 میں 7نشستوں پر امیدوار بلامقابلہ منتخب ہوچکے ہیں۔ٹیکنو کریٹ اور خواتین کی 2،2 اور ایک اقلیتی نشست پر ن لیگ اور سنی  اتحاد کونسل کے امیدوار مدمقابل ہیں۔ پنجاب میں سینیٹ کی 7 جنرل نشستوں پر بلا مقابلہ منتخب امیدواروں کا اعلان ہوا، حکومتی اتحاد کے وفاقی وزیر داخلہ محسن نقوی، پرویز رشید، احد چیمہ، طلال چوہدری، ناصر بٹ اور سنی اتحاد کونسل کے حامد خان اور علامہ راجہ ناصرعباس بلا مقابلہ سینیٹر بن گئے۔ پنجاب سے ٹیکنوکریٹ کی 2 نشستوں پر تین امیدوار، خواتین کی 2 مخصوص نشستوں پر 4 امیدوار اور اقلیت کی ایک نشست پر 2 امیدوار میدان میں ہیں۔

 

سندھ سے سینیٹ کی 12 نشستوں پر 20 امیدوار ہیں، 7 جنرل نشستوں پر پیپلز پارٹی کے 6 امیدوار، ایم کیو ایم کا ایک اور 4 آزاد امیدوار میدان میں ہیں جن میں سے تین پی ٹی آئی کے حمایت یافتہ ہیں۔ خواتین کی 2 نشستوں کے لیے پیپلز پارٹی کی 2 اور ایک آزاد امیدوار میدان میں ہیں۔ٹینکوکریٹس کی 2 نشستوں کی پیپلز پارٹی کے 2 اور 2 آزاد امیدوار مدمقابل ہیں، اقلیت کی ایک نشست پر پیپلز پارٹی کا ایک اور ایک آزاد امیدوار میدان میں ہے۔

 

واضح رہے کہ سنی اتحاد کونسل   نے سندھ سے امیدواروں نے سینیٹ الیکشن کے بائیکاٹ کا اعلان کررکھا ہے۔

 

بلوچستان سے تمام 11 امیدوار بلامقابلہ منتخب ہوچکے ہیں۔ 7 جنرل نشستوں پر بلوچستان عوامی پارٹی (بی اے پی) کے انوار الحق کاکڑ، جمعیت علمائے اسلام (ف) کے احمد خلجی، نیشنل پارٹی کے جان بلیدی، مسلم لیگ (ن) کے آغا شازیب اور سیدال ناصر، پیپلز پارٹی کے عمر گورگیج، اے این پی کے ایمل ولی بلا مقابلہ سینیٹر بن گئے۔

 

خواتین کی 2 مخصوص نشستوں پر پیپلز پارٹی کی حسنہ بانو اور مسلم لیگ (ن) کی راحت جمالی بھی بلامقابلہ منتخب ہوئیں، ٹیکنوکریٹس کی 2 نشستوں پر 3 امیدواروں کے درمیان مقابلہ ہوگا۔

 

جبکہ خیبرپختونخوا سے سینیٹ الیکشن کو الیکشن کمیشن نے مخصوص نشستوں پر کامیاب امیدواروں کےحلف سے مشروط کررکھا ہے ۔

 

الیکشن کمیشن کے مطابق خیبرپختونخوا سے سینیٹ کی 11 نشستوں پر 26 امیدوار مدمقابل ہیں، 7 جنرل نشستوں پر 16 امیدوار ہیں، ٹیکنوکریٹ کی 2 نشستوں پر 6، خواتین کی 2 نشستوں پر 4 امیدواروں میں مقابلہ ہوگا۔

تبصرے بند ہیں.