عالمی بینک کی مخالفت کے باوجود بجلی کے بھاری بھرکم بلوں میں مزید اضافے کا امکان

11

اسلام آباد: بجلی کے بھاری بھرکم بلوں کے بوجھ میں مزید اضافے کا خدشہ ظاہر کیا جا رہا ہے۔

 

بجلی فی یونٹ 3 روپے 53 پیسے تک مزید مہنگی ہونے کا امکان  ہے۔ قیمتوں میں اضافہ اکتوبر کے فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں مانگا گیا ہے۔ 

 

 

ذرائع  کے مطابق ماہ اکتوبر کیلئے پیداواری لاگت کے مطابق ایف سی اے کا اضافہ 36 پیسے ہے۔ درخواست میں 3 روپے 16 پیسے بقایاجات کی مد میں شامل کئے گئے ہیں۔

 

تفصیلات کے مطابق فیول پرائس کی مد میں بقایاجات مجموعی طور 28 ارب سے زائد ہیں۔  ایف سی اے اور بقایاجات کا مجموعی طور پر 40 ارب روپے کا اضافی بوجھ پڑے گا۔

 

فیول پرائس اور بقایاجات کی مد میں سی پی پی اے کی درخواست پر نیپرا میں سماعت آج ہوگی۔نیپرا سی پی پی اے کی درخواست پر سماعت کے بعد بجلی کی قیمتوں میں اضافے کے متعلق حتمی فیصلہ کرے گا۔

 

واضح رہے کہ گزشتہ روز عالمی بینک نے بجلی کی قیمتوں میں اضافے کی مخالفت کرتے ہوئے کہا تھا کہ پاکستان میں بجلی کی قیمتوں میں اضافے کی کوئی ضرورت نہیں ہے، پاکستان میں بجلی کے لائن لاسز کو کم کیا جائے۔

تبصرے بند ہیں.