ٹانگوں اور پاؤں کی سوجن خطرناک بیماری کی علامت ،ماہرین نے خبردار کردیا

84

برمنگھم: ٹانگوں اور پاؤں  کی سوجن   خطرناک بیماری کی علامت  ہے،ا س حوالے سے  ماہرین نے خبردار کردیا ہے۔ ٹانگوں اور پاؤں کی سوجن اگر ٹھیک نہ ہوتو ماہرین صحت کے مطابق اس  سے غفلت نہ کریں   اور فورا معالج سے رجوع کریں کیونکہ یہ  دل کے عارضے کی ابتدائی علامات میں سے  ہے اور  دل کا دورہ بھی ہوسکتا ہے۔
برطانیہ میں 10 لاکھ سے زیادہ لوگوں کو متاثر کرنے کے باوجود، دل کی ناکامی ایک ناقابل یقین حد تک غیر متوقع بیماری ہے۔
ماہرین صحت کے مطابق یہ  حالت اس وقت ہوتی ہے جب دل جسم کے ارد گرد خون پمپ کرنے کے قابل نہیں رہتا ہے، جس کا مطلب ہے کہ آپ کو کافی آکسیجن نہیں مل رہی ہے۔ یہ عام طور پر اس وقت ہوتا ہے جب دل کمزور یا سخت ہو جاتا ہے  لیکن اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ آپ کے دل نے ‘کام کرنا چھوڑ دیا ہے۔
یہ ہارٹ اٹیک یا کارڈیومیوپیتھی نامی بیماری کی وجہ سے ہو سکتا ہے، لیکن ہائی بلڈ پریشر بھی آپ کو زیادہ خطرے میں ڈالے گا۔ برٹش ہارٹ فاؤنڈیشن کا کہنا ہے کہ انگلینڈ میں دل کی ناکامی کی تقریباً 80 فیصد تشخیص ہسپتال میں کی جاتی ہیں  لیکن تقریباً نصف (40 فیصد) مریضوں میں ایسی علامات پائی جاتی ہیں جنہیں  پہلے تشخیص کو متحرک کرنا چاہیے تھا۔
محکمہ صحت کے مطابق    اگر  ٹخنوں اور ٹانگوں میں سوجن ہے تو یہ دل کی بیماری کی علامات میں سے ہے ۔ اگر آپ کے ایک یا دونوں ٹخنوں، پیروں، یا ٹانگوں میں سوجن ہے اور کچھ دنوں کے بعد بہتر نہیں ہوتی ہے یا مزید خراب ہو جاتی ہے توفوری طور پر ماہرڈاکٹر سےچیک اپ کرانا چاہئے  یہ خون کے جمنے یا انفیکشن کی انتباہی علامت بھی ہو سکتی ہے، اس لیے اس مسئلے کی نگرانی کرنا اور اگر یہ برقرار رہتا ہے تو طبی امداد حاصل کرنا ضروری ہے۔ڈاکٹروں کامشورہ ہے کہ   ڈاکٹر سے ملنے سے پہلے ‘ہلکی ورزشیں’ کریں اور سوجن والے حصے کو بلند کریں اور ایکسرسائز پر توجہ ضرور دیں۔

تبصرے بند ہیں.