سابق امریکی صدر ٹرمپ کی  باقاعدہ گرفتاری کے بعد رہائی

15

واشنگٹن: امریکا کے سابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی 2020 کے صدارتی الیکشن میں مداخلت سے متعلق کیس میں باقاعدہ گرفتاری اور  پھر  رہائی ہو گئی۔

 

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق سابق صدر کے ایک بار پھر انگلیوں کے نشانات بھی لیے گئے، تاہم ٹرمپ فلٹن کاؤنٹی جیل میں پیش ہونے کے بعد 2 لاکھ ڈالرکی ضمانت کرواتے ہوئے واپس اپنے قافلے کے ساتھ روانہ ہوگئے۔

 

خیال رہے ڈونلڈ ٹرمپ 2020 کے الیکشن مداخلت کیس میں فرد جرم عائد ہونے کے بعد ہتھیار ڈالنےکی مہلت ختم ہونے سے ایک روز  پہلے ہی پیش ہو گئے۔

 

2020 کے الیکشن مداخلت کیس میں ڈونلڈ ٹرمپ نے خود کو فُلٹن کاؤنٹی جیل میں پیش کیا۔ امریکی تاریخ میں پہلی بارسابق صدرکی قیدیوں والی تصویر بھی جاری کردی گئی ہے۔

 

پیشی کے موقع پر سابق صدر نے دعویٰ کیا کہ انہیں مقدمے میں گھیسٹنا اصل میں 2024 میں ہونے والے صدارتی انتخابات میں ان کے امیدوار بننے کی راہ میں روڑے اٹکانے کی کوشش ہے، جہاں بددیانتی سمجھیں، اس الیکشن کو چیلنج کرنے کا پورا حق ہے۔

تبصرے بند ہیں.