اب مردو خواتین کھلاڑیوں کی انعامی رقم یکساں ہوگی، آئی سی سی قوانین میں بڑی تبدیلیاں

24

دبئی: آئی سی سی قوانین میں بڑی تبدیلیاں کی گئیں ہیں۔ آئی سی سی نے مینز اور ویمنز ایونٹس کے لیے یکساں انعامی رقم کا اعلان کیا ہے۔

 

غیر ملکی میڈیا کے مطابق مینز اور ویمنز ایونٹس کے لیے یکساں انعامی رقم کا اعلان ڈربن میں آئی سی سی کی سالانہ میٹنگز کے دوران کیا گیاہے۔آئی سی سی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ اوور ریٹ کی پابندیوں اور جرمانوں میں بھی تبدیلی کی گئی ہے، کھلاڑیوں کو میچ فیس کے 5 فیصد کے برابر جرمانہ کیا جائے گا، اوور ریٹ کی زیادہ سے زیادہ سزا میچ فیس کا 50 فیصد حصہ ہو گا۔

 

آئی سی سی اعلامیے کے مطابق کوئی ٹیم 80 اوورز تک پہنچنے سے پہلے ہی آؤٹ ہو جاتی ہے تو اوور ریٹ جرمانہ نہیں ہو گا۔آئی سی سی چیئرمین گریک بارکلے نے مینز اور ویمنز ایونٹس کے لیے یکساں انعامی رقم کو ایک بہت بڑا سنگ میل قرار دیتے ہوئے کہا ممبرز ممالک کی فنڈنگ میں بھی اضافہ کر دیا ہے۔ ممبر ممالک کو بنیادی فنڈنگ کے ساتھ کھیل میں حصے کی بنیاد پر رقم ملے گی۔

 

اس کے علاوہ آئی سی سی نے ٹی ٹوینٹی لیگز کے لیے بھی قوانین بنا دیے ہیں، لیگز کھلاڑیوں کے ہوم بورڈ کو فیس دینے کی پابند ہوں گی۔لیگز میں پلیئنگ الیون کے حوالے سے بھی آئی سی سی نے قانون بنایا ہے جس کے مطابق پلیئنگ الیون میں کم از کم 7 مقامی یا ایسوسی ایٹ پلیئرز کی شمولیت لازم ہے۔

تبصرے بند ہیں.