امارات سے قرض نہیں مشترکہ سرمایہ کاری چاہتے ہیں،کوشش ہے ڈیجیٹلائزیشن کا عمل تیزی سے مکمل ہو: شہباز شریف

17

ابوظہبی:وزیر اعظم شہباز شریف  کاکہنا ہےکہ  امارات سے قرض نہیں مشترکہ سرمایہ کاری چاہتے ہیں۔  وزیر اعظم شہباز شریف نے تقریب سے خطاب میں کہاکہ   امارات سے قرض نہیں مشترکہ سرمایہ کاری چاہتے ہیں۔

ان کاکہنا تھا کہ   ہم نے کشکول توڑ دیا، متحدہ عرب امارات سے قرض نہیں مشترکہ سرمایہ کاری چاہتے ہیں، ہماری کوشش ہے کہ ڈیجیٹلائزیشن کا عمل تیزی سے مکمل ہو۔

وزیر اعظم شہباز شریف نے  کہا کہ  متحدہ عرب امارات کے باصلاحیت آئی ٹی پروفیشنلز کو دیکھ کر بے حد خوشی ہو رہی ہے، آئی ٹی پروفیشنلز معیشت کے تمام شعبوں کی ڈیجیٹلائزیشن میں اہم کردار ادا کر رہے ہیں۔شہباز شریف نے کہا کہ پاکستان کی آبادی کا 60 فیصد سے زائد حصہ نوجوانوں پر مشتمل ہے، گزشتہ ڈھائی ماہ میں سب سے زیادہ وقت آئی ٹی کے فروغ کے امور پر دیا۔

وزیراعظم نے کہا کہ شیخ محمد بن زید کی طرف سے معیشت میں لائی گئی جدت قابل رشک ہے، متحدہ عرب امارات کے صدر پاکستان کے عظیم دوست ہیں، آج کی نشست اس بات کی متقاضی ہے کہ آئی ٹی کے شعبے میں کس طرح اہداف کو حاصل کرنا ہے۔
انہوں نے کہا کہ متحدہ عرب امارات کے ساتھ مل کرپاکستانی معیشت کو مستحکم کرنا چاہتے ہیں، متحدہ عرب امارات کے صدر شیخ محمد بن زید نے اپنے والد کی طرح ہر مشکل وقت میں پاکستان کا ساتھ دیا، متحدہ عرب امارات پاکستان کا عظیم دوست اور بھائی ہے۔
شہباز شریف کا کہنا تھا کہ متحدہ عرب امارات آئی ٹی کی فیلڈ میں لیڈ کر رہا ہے، ہم متحدہ عرب امارات سے قرض نہیں مشترکہ سرمایہ کاری چاہتے ہیں، ترقی امداد کے ساتھ نہیں آتی، ہمیں خود انحصاری کی منزل کو حاصل کرنا ہے۔ متحدہ عرب امارات میں کام کرنے والے پاکستانی ہمارا قیمتی اثاثہ ہیں۔

تبصرے بند ہیں.