190 ملین پاؤنڈ ریفرنس:اڈیالہ جیل میں سیکیورٹی خدشات کے پیش نظر سماعت 17 مئی تک ملتوی

19

راولپنڈی: بانی پی ٹی آئی اوربشری بی بی کیخلاف 190 ملین پاونڈز ریفرنس پر سماعت بنا کسی کاروائی کے 17 مئی تک ملتوی کر دی، احتساب عدالت نے جیل انتظامیہ کے سیکورٹی خدشات پر مبنی خط کی روشنی میں سماعت ملتوی کی  گئی ہے۔ 

ڈیالہ جیل حکام نے  سیکیورٹی خدشات  کے پیش نظر  190 ملین پاؤنڈ ریفرنس کی سماعت ملتوی کرنے کی استدعا کی تھی۔

سپرٹنڈنٹ اڈیالہ جیل  کی جانب سے احتساب عدالت اسلام آباد کو لکھے گئےخط میں کہا گیا کہ اڈیالہ جیل صوبے کی حساس ترین جیل ہے، اڈیالہ جیل میں گنجائش کے برعکس 7 ہزار کے قریب قیدی موجود ہیں،دہشتگردی سمیت سنگین جرائم میں ملوث مجرم اڈیالہ جیل میں قید ہیں، سیاسی بیک گراؤنڈ رکھنے والے ہائی پروفائل قیدی بھی اڈیالہ جیل میں ہیں، پنجاب حکومت کے محکمہ داخلہ کو کالعدم تنظیموں کی جانب سے جیلوں پر حملے کے منصوبے کی رپورٹ موصول ہوئی ہے ۔

رپورٹ کے مطابق میانوالی، ڈیرہ غازی خان، راولپنڈی اور اٹک جیل کو سکیورٹی تھریٹس ہیں، اڈیالہ جیل کی سکیورٹی کیلئے قانون نافذ کرنے والی ایجنسیوں کے تعاون سے فرضی مشق بھی کی گئی، جیل سے ملحقہ رہائشی علاقوں کے مکینوں کی سیکیورٹی کلیئرنس بھی کی جارہی ہے۔

خط میں مزید کہا گیا کہ سکیورٹی انتظامات کے تناظر میں 190 ملین پائونڈ ریفرنس پر سماعت آئندہ ہفتے تک کیلئے ملتوی کی جائے۔ 

بعد ازاں عدالت میں احتساب عدالت کے جج ناصر جاوید رانا نے خط کے تناظر میں سماعت بغیر کسی کاروائی کے 17 مئی تک ملتوی کر دی۔

تبصرے بند ہیں.