دورہ سعودی عرب تاریخی اہمیت کا حامل تھا، پاکستان اور سعودیہ کی معاشی شراکت داری سے تعلقات میں ایک نئے دور کا آغاز ہوا: وزیر اعظم

15

اسلام آبا د: وزیر اعظم شہباز شریف  کاکہنا ہےکہ  دورہ سعودی عرب کو تاریخی اہمیت کا حامل تھا، پاکستان اور سعودیہ کی معاشی شراکت داری سے تعلقات میں ایک نئے دور کا آغاز ہوا۔ وزیر اعظم شہباز شریف نے ورہ سعودی عرب کے اختتام پر اپنے بیان میں کہا کہ   دورہ سعودی عرب کو تاریخی اہمیت کا حامل تھا، پاکستان اور سعودیہ کی معاشی شراکت داری سے تعلقات میں ایک نئے دور کا آغاز ہوا۔

انہوں نے کہا کہ آئندہ چند دنوں میں سعودی عرب کی کاروباری شخصیات کا وفد پاکستان آرہا ہے، سعودی عرب کے کاروباری وفد کی آمد سے معاشی شراکت داری کی رفتار مزید تیز ہوگی۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ قیادت کی سطح پر ہونے والی مفاہمت کو عملی شکل دینے کےلیے پوری محنت سے کام کریں گے۔
ان کا کہنا تھا کہ دو ماہ کے دوران پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان اعلیٰ ترین سطح پر ریکارڈ وفود کا تبادلہ ہوا۔وزیر اعظم  نے کہا کہ عالمی اقتصادی فورم میں عالمی رہنمائوں سے ملاقاتیں ہوئیں، کثیرالجہتی شعبوں میں باہمی تعاون، تجارت و سرمایہ کاری کے فروغ میں مثبت پیشرفت ہوئی۔شہباز شریف کا کہنا تھا کہ ورلڈ اکنامک فورم پر واشگاف انداز میں کہا کہ دنیا کو پُرامن بنانا ہے تو غزہ میں مستقل امن قائم کرنا ہوگا۔
انہوں نے کہا کہ پُرتپاک میزبانی اور پاکستان سے پُرخلوص محبت پر ولی عہد محمد بن سلمان کا تہہ دل سے شکریہ ادا کرتا ہوں۔ شہزادہ محمد بن سلمان نے سعودی وزراء کو پاکستان کے حوالے سے خصوصی ہدایات جاری کیں۔
وزیراعظم نے کہا کہ سعودی وزراء نے قیادت کے درمیان مفاہمت پر عملدرآمد کےلیے بھرپور تیاری کی۔ سعودی عرب کے وزراء کو بھی خراج تحسین پیش کرتا  ہوں۔

تبصرے بند ہیں.