توانائی کی بلند قیمتیں، ٹیکسٹائل ملز بند ہونے کا خدشہ

124

اسلام آباد:  توانائی کی بلند قیمتوں کے پیش نظر آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن نے انڈسٹری بند ہونے کا خدشہ ظاہر کر دیا۔

 

تفصیلات کے مطابق آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز ایسوسی ایشن کی جانب سے چند ماہ میں بڑی صنعتیں بند ہونے کا خدشے کےحوالے سے وزارت توانائی، وزارت تجارت اور ایس آئی ایف سی کو خط لکھا گیا۔

 

خط کے متن کے مطابق  پاکستان برآمدی مارکیٹ شیئر کھو رہا ہے اور صنعت دم توڑرہی ہے،

 

خط کے متن میں کہا گیا کہ انڈسٹری کو اس وقت 50 روپے فی یونٹ میں بجلی فراہم کی جا رہی ہے،  فی یونٹ بجلی 18.5 سینٹ فی کلو واٹ ریجنل ممالک سے زائد ہے۔

 

اپٹما نے اپنے خط میں مزید کہا کہ ٹیکسٹائل سیکٹر کیلئے گیس اور آر ایل این جی کی قیمتیں بھی دگنی ہیں جبکہ گزشتہ سال صنعتوں کیلئے گیس کی قیمت میں 250 فیصد کا اضافہ کیا جاچکا ہے۔

 

آل پاکستان ٹیکسٹائل ملز اکے مطابق انڈسٹری کے بند ہونے سے ملازمتوں میں کمی آئے گی اور بے روزگاری بڑھے گی۔

تبصرے بند ہیں.