پرویز الٰہی کو رہا کرنے کا حکم

21

لاہور: لاہور ہائیکورٹ نے سابق وزیر اعلی پرویز الہی کے خلاف پنجاب اسمبلی کے پرنسپل سیکرٹری بھرتی کیس میں ضمانت منظور کر لی۔

 

لاہور ہائیکورٹ میں سابق وزیر اعلی چوہدری پرویز الٰہی کے خلاف پنجاب اسمبلی کے پرنسپل سیکرٹری بھرتی کیس کی سماعت جسٹس شہرام سروس چوہدری نے کی۔ پرویز الٰہی کی جانب سے ایڈووکیٹ عامر سعید راں اور فرمان منیس پیش ہوئے۔

 

عامر سعید راں ایڈووکیٹ  نے سماعت کے دوران موقف اختیارکیا کہ جوڈیشل مجسٹریٹ نے محمد خان بھٹی کو ڈسچارج کیا، پرویز الٰہی کے وزیر اعلیٰ بننے سے پہلے پرنسپل سیکرٹری کا نوٹیفکیشن جاری کیا گیا۔

 

انہوں نے مزید کہا کہ وزیر اعلیٰ کے پرنسپل سیکرٹری کا نوٹیفکیشن چیف سیکرٹری پنجاب نے جاری کیے، اس مقدمہ میں چیف سیکرٹری کو فریق ہی نہیں بنایا گیا، یہ کیس سیاسی بنیادوں پر قائم کیا گیا ہے۔

 

عامر سعید راں ایڈووکیٹ نے عدالت سے استدعا کی کہ عدالت پرویز الٰہی کی ضمانت منظور کر کے رہائی کا حکم دے۔

 

بعد ازاں عدالت نے  چوہدری پرویز الٰہی کی ضمانت منظور کرکے رہا کرنے کاحکم دے دیا۔ عدالت نے پرویز الٰہی کو ایک لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کا حکم بھی دیا۔

تبصرے بند ہیں.