پہلے بھی پارٹی میں چار پانچ الیکشن جعلی تھے، فراڈ الیکشن نہیں ہونے چاہئیں:پرویز خٹک

53

پشاور:پاکستان تحریک انصاف پارلیمنٹیرین کے سربراہ پرویز خٹک کا کہنا ہے کہ  پہلے بھی پارٹی میں چار پانچ الیکشن جعلی تھے، صرف کاغذی کارروائی تھی، پارٹی میں جمہوریت ہونی چاہیے، فراڈ الیکشن نہیں ہونے چاہئیں۔

پاکستان تحریک انصاف پارلیمنٹیرین کے سربراہ پرویز خٹک کا کہنا ہے کہ  پہلے بھی پارٹی میں چار پانچ الیکشن جعلی تھے، صرف کاغذی کارروائی تھی، پارٹی میں جمہوریت ہونی چاہیے، فراڈ الیکشن نہیں ہونے چاہئیں۔ان کاکہنا تھا کہ  سابق چیئرمین پی ٹی آئی ملک میں الیکشن نہیں صدارتی نظام چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ہم حلف اٹھاتے ہیں تو عہد کرتے ہیں کوئی راز فاش نہیں کرنا، سائفر لہرا کر سابق چیئرمین نے غداری اور آئین کی خلاف ورزی کی، ان پر سائفر کیس میں دہشت گردی کا مقدمہ درج کرنا چاہیے۔

جب ان کی حکومت ختم ہوئی تو ہمارے پاس اکثریت نہیں تھی، انہوں نے سوچا کہ ملک کو نہیں چلنے دوں گا، سابق چیئرمین پی ٹی آئی کا خیال تھا ملک میں انتشار پھیلائوں گا، ڈیڑھ سال تک انتشار پھیلاتا رہا، جس سے ملکی معیشت پرا ثر ہوا۔

پی ٹی آئی پارلیمنٹیرین کے سربراہ نے مزید کہا کہ آرمی تنصیبات پر حملوں کے لیے الگ ٹیم بنائی گئی تھی اور اسمبلی توڑنے کے حق میں کوئی سیاست دان نہیں تھا۔ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ سابق چیئرمین پی ٹی آئی کو سمجھایا کہ صوبائی اسمبلی نہ توڑی جائے، وہ اپنے آگے کسی کو برداشت نہیں کرتے تھے۔

تبصرے بند ہیں.