اسرائیل یرغمالیوں کی رہائی کے باوجود اپنی بربریت سے باز نہ آیا, مقبوضہ مغربی کنارے میں اسرائیلی حملے جاری، 6 فلسطینی شہید

10

 

غزہ: اسرائیل یرغمالیوں کی رہائی کے باوجود اپنی بربریت سے باز نہ آیا اور مغربی کنارے میں اپنے حملے جاری رکھے ہوئے ہے۔

 

فلسطین ہلال احمر کے مطابق مقبوضہ مغربی کنارے میں اسرائیلی چھاپہ مار کارروائیاں رات بھر جاری رہیں اور آج صبح جنین میں ڈرون حملے میں ایک فلسطینی شہید ہو گیا اور ایک اور فلسطینی نابلس کے جنوب میں واقع گاؤں یتما میں شہید ہوا۔

 

 

فلسطین ہلال احمر کے مطابق کل رات سے اب تک چھ فلسطینیوں کی ہلاکت کی اطلاع ہے۔

 

 

گزشتہ روز معاہدے کے مطابق یرغمالیوں کو  رہا کرتے ہوئے غزہ میں جنگ بندی کی گئی۔حماس کی جانب سے 20 یرغمالیوں کی رہائی کے بدلے اسرائیل نے جنگ بندی ڈیل کے تحت 39 فلسطینی قیدیوں کو رہا کیا تاہم دوسری جانب اسرائیل نے مغربی کنارے کے کیمپ جنین پر حملہ کرتے ہوئے 4 فلسطینیوں کو شہید کردیا۔

بتایا جارہا ہے کہ گھر کے باہر کھڑے 25 سال کے فلسطینی ڈاکٹر کو بھی گولی مار کر شہید کردیا گیا جبکہ رام اللہ میں بھی ایک فلسطینی شہید کیا گیا۔

 

مغربی کنارے میں7 اکتوبر سے اب تک اسرائیلی فورسز نے 52 بچوں سمیت کم از کم 229 فلسطینیوں کو شہید اور 3000 سے زائد افراد کو گرفتار کیا ہے۔

 

اس کے علاوہ  اسرائیلی فوج نے رفح اور خان یونس سے شمالی غزہ واپس جانے والے فلسطینی شہریوں پر بھی فائرنگ کی جس کے نتیجے میں 2 افراد شہید اور 11 زخمی ہوئے۔

تبصرے بند ہیں.