پاکستانیوں کیلئے مختصر حج متعارف کروانے کا اعلان، دورانیہ 18 سے 20 دن پر مشتمل ہو گا

176

اسلام آباد :پاکستانیوں کیلئے مختصر حج متعارف کروانے کا اعلان کیا گیا ہے، اس کا دورانیہ 18 سے 20 دن پر مشتمل ہو گا۔

 

وزارت مذہبی امور نے پاکستانی حجاج کیلئے مختصر دورانیہ کا حج متعارف کروانے کا اعلان کر دیا ہے۔ اگلے سال سے 18 سے 20 دن کے حج کا پیکج بھی دیا جائے گا۔
سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے مذہبی امور کا اجلاس سینیٹر مولانا عبدالغفور حیدری اجلاس کی صدارت ہوا۔ نگران وزیر برائے مذہبی امور انیق احمد بھی اجلاس میں شریک ہوئے۔کمیٹی میں حج 2023 کے انتظامات، کمزوریوں سمیت دیگر معاملات ، روڈ ٹو مکہ پروگرام پر بریفنگ دی گئی۔نگران وزیر مذہبی امور انیق احمد نے کہا کہ مختصر دورانیہ کا حج 18 سے 20 دن پر مشتمل ہو گا، 40 دن یا مختصر حج کا فیصلہ حجاج کرام خود کریں گے۔

 

چئیرمین کمیٹی نے کہا کہ مختصر حج کا دورانیہ 18 سے 30 دن تک کیا جائے، جس پر انیق احمد نے کہا کہ اس تجویز پر غور کیا جائے گا۔
وزیر مذہبی امور کا مزید کہنا تھا کہ ہماری کوشش ہوگی کہ مختصردورانیے حج کے اخراجات جنرل حج کے برابر ہوں۔ عام طور پر حج کا پیکیج 35 سے 50 دنوں پر مشتمل ہوتا ہے جس میں رہائشی ہوٹل، کھانے اور ٹرانسپورٹ کے اخراجات ملا کر مجموعی طور پر غیر معمولی خرچ ہو جاتا ہے۔

گزشتہ برسوں میں روپے کے مقابلے میں ڈالر کی قیمت میں اضافے کی وجہ سے عازمین کی بڑی تعداد کے لیے حج کے اخراجات ناقابل برداشت ہو چکے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ رواں سال 2023 میں پاکستانی شہریوں نے سرکاری قرعہ اندازی میں کوٹے سے بھی کم تعداد میں درخواستیں جمع کروائی تھیں۔

تبصرے بند ہیں.