احسن اقبال کی معیشت میں بہتری کیلئے قوم سے چائے کم پینے کی اپیل

9

اسلام آباد: وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی و ترقی احسن اقبال نے معیشت کی بہتری کیلئے قوم سے چائے کم پینے کی اپیل کر دی۔ کہتے ہیں پاکستان چائے درآمد کرتا ہے، کم استعمال سے سرمایہ بچے گا، ایک سال بعد جب حکومت چھوڑیں گے تو معیشت کے دیوالیہ ہونے کا خطرہ ٹل چکا ہو گا۔ 
تفصیلات کے مطابق عدالت کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ عمران نیازی اور وزراءاپنے خلاف اعتراف جرم کر رہے ہیں، وزراءکہتے ہیں ہم نے اپنا پھندا اپوزیشن کے گلے میں ڈال دیا ہے، لیکن ہم نے سیاست نہیں بلکہ معیشت اور ملک کو بچانے کیلئے حکومت سنبھالی ہے۔ 
ان کا کہنا تھا کہ انٹرنیشنل مانیٹرنگ فنڈ (آئی ایم ایف) کے ساتھ کئے گئے معاہدے کے تحت ہمیں ہاتھ باندھ کر عمل کرنا پڑ رہا ہے، آئی ایم ایف کہتا ہے ہمیں حکومت کا نہیں پاکستان کا پتہ ہے، حفیظ شیخ اور شوکت ترین نے آئی ایم ایف کے ساتھ ہونے والے معاہدے پر دستخط کئے۔ 
احسن اقبال نے کہا کہ ملک کیلئے بہتر سہولت حاصل کرنے کی کوشش کر رہے ہیں اور حکومت کے سخت فیصلوں کا مقصد بھی ملکی معیشت کو بحال کرنا ہے، امید ہے کہ ایک سال بعد جب حکومت چھوڑیں گے تو معیشت کے دیوالیہ ہونے کا خطرہ ٹل چکا ہو گا، تاجروں سے اپیل ہے کہ بازار ساڑھے آٹھ بجے بند کرنے دئیے جائیں۔ 
مسلم لیگ (ن) کے رہنماءکا کہنا تھا کہ عمران خان اب معصوم بن کر سوال کر رہے ہیں ملک کا کیا بنے گا؟ وفاقی حکومت کو چار ہزار ارب روپے صوبوں کو دے کر چار ہزار ارب روپے کا قرض اتارنا ہے، یہ مسائل ہمیں ورثہ میں ملے ہیں، عمران خان نے اپنی شہرت کیلئے بجلی، ڈیزل اور پیٹرول کی قیمتیں کم کی مگر اس وجہ سے معیشت کو بڑا نقصان پہنچا ہے۔ 

تبصرے بند ہیں.