علی امین گنڈاپور ، عامر مغل کےناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری

20

اسلام آباد:  انسداد دہشتگردی عدالت نے علی امین گنڈاپور عامر مغل کی حاظری سے استثنیٰ کی درخواست مسترد کر تے ہوئےغیر حاضر ملزمان کو ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیے۔

 

بانی پی ٹی آئی اور دیگر کیخلاف تھانہ سنگجانی اور آئی 9 میں درج مقدمات کی سماعت انسدادِ دہشت گردی عدالت کے جج طاہر عباس سپرا نے کی۔علی نواز اعوان، واثق قیوم ،عامر کیانی و دیگر عدالت میں پیش  ہوئے۔

 

عدالت نے علی امین گنڈاپور عامر مغل کی حاظری سے استثنیٰ کی درخواست مسترد کر دی ، علی امین گنڈاپور عامر مغل سمیت غیر حاضر ملزمان کو ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری  کر دیے گئے ہیں۔

 

وزیر اعلیٰ کے پی کے علی امین گنڈاپور ،عامر مغل، کیجانب سے حاضری سے استثنیٰ کی درخواست پیش کی گئی جو عدالت نے  مسترد کر دی۔ علی امین گنڈاپور عامر مغل سمیت غیر حاضر ملزمان کو ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیے۔

 

عدالت نے استفسار  کیا کہ حاضری پوری نا ہونا ملزمان پر ہے یا کورٹ پر ہے، کس پر وکلاء نے جواب دیا کہ ملزمان پر ہے۔ عدالت نے ریمارکس دیے کہ تمام غیر حاضر ملزمان کے وارنٹ گرفتاری ہوں گے، تماشہ بنا ہوا ہے ایک آتا ہے دو نہیں ہوتے آتے۔

 

وکلاء صفائی نے کہا کہ اگلی پیشی پر تمام ملزمان کی حاضری یقینی ہو گی۔ عدالت  نے کہا کہ تمام غیر حاضر ملزمان کے بلاضمانتی وارنٹ گرفتاری جاری کررہے ہیں، آئندہ پیشی پر حاضری کے والے سے مکمل یقین دہانی کروائی جائے گی تو پھر وارنٹ کا معاملہ دیکھیں گے۔ وکلاء صفائی  نے یقین دہانی کروائی کی کہ ایک موقع دیا جائے اگلی پیشی پر تمام ملزمان ہوں گے۔

 

بانی پی ٹی آئی کی ویڈیو لنک پیشی کے حوالے سے سپریڈنٹ اڈیالہ جیل سے تحریری جواب طلب  جمع کرا دیا گیا

 

جج طاہر عباس سپرا  نے کہا کہ جو ملزم 8 تاریخ کو نہیں آئیں گے انکو اشتہاری قرار دوں گا، 8 جولائی کو کوئی بیمار ہو بخار ہے کچھ بھی جو نہ آیا اسے اشتہاری قرار دیں گے ۔ عدالتی مفرور کو اشتہاری قرار دینے کیلئے تیس دن ضروری نہیں ہیں، میں نے ان کیسز کو انجام تک پہچانا ہے آپکا ہی اس میں فائدہ ہوگا۔  اگر کیسز میں جان ہوئی تو چلیں گے ورنہ فارغ ہوں گے،8 جولائی کے بعد  کیسز کی سماعت روزانہ کی بنیاد پر ہوگی۔

 

پی ٹی آئی رہنما فیصل جاوید،  واثق قیوم عباسی عدالت پیش ہو گئے جبکہ پی ٹی آئی وکلاء آمنہ علی زاہد ڈار عنصر کیانی عدالت پیش ہوئے

 

بعد ازاں عدالت نے دونوں مقدمات کی سماعت 8 جولائی تک ملتوی کردی۔

تبصرے بند ہیں.