صدر مملکت نے میڈیا تک بہرے افراد کی رسائی کے ایکٹ 2022ءکی منظوری دیدی

3

اسلام آباد: صدر مملکت ڈاکٹرعارف علوی نے میڈیا تک بہرے افراد کی رسائی کے ایکٹ 2022ءکی منظوری دیدی ہے جس کا نفاذ پورے پاکستان پر فی الفور ہو گا۔ صدر مملکت کا کہنا ہے کہ سماعت سے محروم یعنی ’بہرے‘ لوگوں کیلئے ایک بہت بڑی تبدیلی کا آغاز ہو گیا ہے۔ 
تفصیلات کے مطابق مذکورہ ایکٹ کے نفاذ کے 6 ماہ بعد کسی بھی سرکاری و نجی الیکٹرانک میڈیا، نجی ٹی وی چینل، کیبل ٹی وی یا کسی دوسرے میڈیا پر پاکستان سائن لینگوئج ترجمان کے بغیر نیوز بلیٹن کی اجازت نہیں ہو گی۔ 

ایک سال بعد کسی بھی سرکاری و نجی الیکٹرانک میڈیا، نجی ٹی وی چینل، کیبل ٹی وی یا کسی دوسرے میڈیا پر سائن لینگوئج ترجمان کے بغیر کسی بھی پروگرام، انٹرٹینمنٹ، اشتہار، ٹاک شو، ڈرامہ، فا یا کسی بھی قسم کے تصویری پروگرام کی اجازت نہیں ہو گی۔ 

سرکاری اور نجی میڈیا ہاؤسز کو ایکٹ کے نفاذ کے 6 ماہ کے اندر ایکٹ پر عملدرآمد کیلئے سائن لینگوئج ترجمان مقرر کرنا ہو گا جبکہ ایکٹ کا نفاذ پورے پاکستان میں فی الفور ہو گا۔ 

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے اس ضمن میں سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری پیغام میں لکھا ’سماعت سے محروم یعنی ’بہرے‘ لوگوں کیلئے ایک بہت بڑی تبدیلی کا آغاز ہو گیا۔ یہ قانون ٹی وی پروگراموں اور خبروں میں اشاروں کے ذریعے ان کی شمولیت کو یقینی بنائے گا۔ اس سلسلے میں ان کی مسلسل جدوجہد کو سلام پیش کرتا ہوں۔ ہمیں بھی ان کے ساتھ بات چیت کرنے کیلئے کچھ اشاروں کی زبان سیکھنی ہو گی۔ 

تبصرے بند ہیں.