عمران خان پر قاتلانہ حملہ، (ن) لیگ گوجرانوالہ کے مقامی رہنماءکو حراست میں لے لیا گیا

29

لاہور: پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان پر قاتلانہ حملے کی تحقیقات کرنے والی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم (جے آئی ٹی) نے (ن) لیگ گوجرانوالہ کے مقامی رہنما کو حراست میں لے لیا ہے۔ 
تفصیلات کے مطابق (ن) لیگ گوجرانوالہ کے سیکرٹری اطلاعات مدثر نذیر کی حراست کے حوالے سے ذرائع کا کہنا ہے کہ مدثر نذیر کے بھائی احسن نے وقوعہ کے روز اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹ پر لکھا تھا کہ ”آج کچھ بڑا ہونے والا ہے۔“ 
ذرائع کے مطابق بعدازاں وہ پوسٹ ڈیلیٹ بھی کر دی گئی تھی لیکن مدثر نذیرکا بھائی احسن پہلے ہی جے آئی ٹی کی حراست میں ہے اور اسی سلسلے میں مزید پوچھ گچھ کیلئے اب مدثر کو بھی حراست میں لے لیا گیا ہے۔
دوسری جانب گوجرانوالہ کی انسداد دہشت گردی عدالت (اے ٹی سی) نے عمران خان پر قاتلانہ حملے کے ملزم نوید اور اسے مبینہ طور پر اسلحہ فراہم کرنے والے وقاص کو 12 روزہ ریمانڈ پر جے آئی ٹی کے حوالے کر دیا ہے۔ 
عمران خان پر قاتلانہ حملے کے مقدمے کی آج اے ٹی سی گوجرانوالہ میں سماعت ہوئی، جے آئی ٹی نے مرکزی ملزم نوید کے ساتھ دوسرے ملزم وقاص کو بھی عدالت میں پیش کیا۔
تفتیشی افسران نے عدالت کو بتایا کہ وقاص ملزم نویدکا سہولت کار ہے، وقاص نے نویدکو اسلحہ بھی فراہم کیا تھا جس پر عدالت نے دونوں ملزمان کو 12 روزہ جسمانی ریمانڈ پر جے آئی ٹی کے حوالے کر دیا۔

تبصرے بند ہیں.