حکومت کے مشکل فیصلوں سے ملک ڈیفالٹ کے خطرے سے نکل گیا: وزیراعظم

17

اسلام آباد: وزیراعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ اتحادی حکومت کے مشکل فیصلوں کی وجہ سے ملک ڈیفالٹ کے خطرے سے نکل گیا، حکومت مہنگائی کم کر کے عوام کو ریلیف دینے کی خاطر ترجیحی بنیادوں پر اقدامات کر رہی ہے جبکہ بیرونی سرمایہ کاروں کو ہر ممکن سہولت فراہم کی جا رہی ہے۔ 
تفصیلات کے مطابق معروف بین الاقوامی انویسٹمنٹ بینکنگ اینڈ کیپٹل مارکیٹس فرم ’جیفریز‘ کے وفد نے وزیراعظم شہباز شریف سے ملاقات کی جبکہ وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار بھی اس موقع پر موجود تھے۔ وزیراعظم نے وفد کا خیر مقدم کرتے ہوئے انہیں پاکستان میں اپنا دفتر کھولنے کی دعوت بھی دی۔ 
ذرائع کے مطابق ’جیفریز‘ کے وفد نے وزیر اعظم کی قیادت میں ملک کو در پیش معاشی چیلنجز کا موثر مقابلہ کر کے ملک کے معاشی استحکام کی سمت گامزن ہونے کو خوش آئند قرار دیا جبکہ وزیراعظم نے کہا کہ حکومت ملکی معیشت کو مستحکم کرنے کیلئے ہر ممکن اقدامات اٹھا رہی ہے۔ 
ان کا کہنا تھا کہ اتحادی حکومت کے مشکل فیصلوں کی بدولت ملک ڈیفالٹ کے خطرے سے نکل چکا ہے جس کے بعد پاکستان کی معاشی صورتحال کے بارے میں غلط معلومات پھیلا کر بے بنیاد ہیجانی کیفیت پیدا کرنے کی مذموم کوشش کی جا رہی ہے تاہم اسے کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ 
وزیراعظم نے کہا کہ اتحادی حکومت نے سیاسی قیمت کی پرواہ کئے بغیر ملک کو گزشتہ چار سال کی نا اہلیوں کا خمیازہ بھگتنے سے بچا لیا اور اب مہنگائی کم کرنے اور عام آدمی کے ریلیف کیلئے ترجیحی بنیادوں پر اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں۔ 
ان کا مزید کہنا تھا کہ حکومت بیرونی تجارتی خسارہ کم کرنے کیلئے کوشاں ہے جبکہ پاکستان میں بیرونی سرمایہ کاری کے فروغ کیلئے حکومت سرمایہ کاروں کو ہر ممکن سہولت فراہم کر رہی ہے۔

تبصرے بند ہیں.