وفاقی حکومت کا شرعی عدالت کے سود سے متعلق فیصلے کیخلاف اپیلیں واپس لینے کا اعلان

12

اسلام آباد: وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے سود سے متعلق فیڈرل شریعت کورٹ کے فیصلے کیخلاف سپریم کورٹ میں دائر اپیلیں واپس لینے کا اعلان کر دیا ہے۔ 
تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں اسلامی بینکنگ کے نظام کو آگے بڑھا رہے ہیں اور ہماری کوشش ہو گی کہ تیزی سے اس کا نفاذ کیا جائے۔ 
ان کا کہنا تھا کہ وفاقی شرعی عدالت نے گزشتہ دنوں سودی نظام کے خلاف فیصلہ دیا ہے، قرآن و سنت کا بھی یہی حکم ہے، اس فیصلے کیخلاف سٹیٹ بینک اور نیشنل بینک نے سپریم کورٹ میں اپیلیں دائر کی تھیں۔
وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا کہ اس معاملے پر تفصیلی بحث ہوئی اور گورنر سٹیٹ بینک سے خصوصی مشاورت کی گئی، ہمارے نزدیک فیصلہ کرنے کا معیار قران و سنت ہے۔
انہوں نے بتایا کہ وزیراعظم شہباز شریف کی منظوری سے سٹیٹ بینک اور نیشنل بینک اس فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں دائر اپیلیں واپس لے لیں گے، ملکی معیشت کی بہتری کیلئے حکومت اہم اقدامات کررہی ہے۔
وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ حکومت ملک میں اسلامی نظام کو نافذ کرنے کی پوری کوشش کرے گی، اللہ ہمیں توفیق دے کہ ہم ملک میں سود سے پاک اسلامی نظام کو نافذ کر سکیں۔ 
انہوں نے مزید کہا کہ اس میں چیلنجز ہیں اور 75 سال سے جاری بینکاری نظام کو اچانک تبدیل نہیں کیا جا سکتا مگر حکومت نے اپنی حد تک کی گئی اپیلیں واپس لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

تبصرے بند ہیں.