ارشد شریف کے کیس میں مصدقہ حقائق تک قیاس آرائیوں سے گریز کیا جائے: مریم اورنگزیب

19

اسلام آباد: وفاقی وزیر اطلاعات مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ کینیاکی حکومت نے سرکاری طور پر ارشد شریف کی موت سے متعلق اب تک کچھ نہیں بتایا، ارشد شریف کے کیس میں مصدقہ حقائق تک قیاس آرائیوں سے گریز کیا جائے۔ 
تفصیلات کے مطابق مریم اورنگزیب نے اپنے ایک بیان میں صحافی ارشد شریف کی کینیا میں موت پر تعزیت کا اظہار کیا اور بتایا کہ ارشد شریف کی والدہ اورپاکستان میں کینیا کے سفیر سے ٹیلی فون پر گفتگو جس میں ان کی والدہ کو اب تک کی پیش رفت اور حاصل معلومات سے آگاہ کیا ہے۔ 
وزیر اطلاعات نے ارشدشریف کی والدہ سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ارشد شریف کے اہل خانہ کے غم میں شریک ہیں، ان کے ساتھ پیش آئے واقعے کی وجوہات کا پتا چلانے کی کوششیں جاری ہیں۔ 
ان کا کہنا تھا کہ کینیاکی حکومت نے سرکاری طور پر ارشد شریف کی موت سے متعلق اب تک کچھ نہیں بتایا، کینیا کی حکومت کے سرکاری سطح پر آگاہ کرنے کی تفصیلات ارشد شریف کے اہل خانہ اور عوام کو بتائیں گے۔
مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ پاکستانی میڈیا پرارشد شریف سے متعلق جاری قیاس آرائیاں افسوسناک ہیں، مصدقہ حقائق سامنے آنے تک قیاس آرائیوں سے گریز کیا جائے۔ 
انہوں نے بتایا کہ کینیا میں پاکستان کی ہائی کمشنر آئی جی پولیس کے دفتر جا رہی ہیں، وزارت داخلہ بھی کینیاکی سیکیورٹی ایجنسیز سے رابطے میں ہیں، ارشد شریف کے ساتھ پیش آئے واقعے کے تمام حقائق تک پہنچیں گے۔
دوسری جانب وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنااللہ نے کہا کہ کینیا میں ارشدشریف کے ساتھ پیش آنے والا واقعہ افسوسناک ہے، ہم غمزدہ خاندان کے دکھ میں برابر شریک ہیں۔
انہوں نے کہا کہ واقعے سے متعلق حقائق جاننے کیلئے کینیا کی حکومت سے رابطے میں ہیں، نیروبی میں موجود پاکستانی سفارتخانہ معاملے میں مکمل معاونت کررہا ہے۔

تبصرے بند ہیں.