قانون سازی پارلیمنٹ کا کام ہے، چند لوگوں کی خواہشات پر سب لوگوں کو نظرانداز نہیں کرسکتے: ہائیکورٹ 

22

 

ممبئی:  ممبئی ہائیکورٹ نے گوشت کے اشتہارات دکھانے پر پابندی کی اپیلیں مسترد کردی ہیں۔

 

چیف جسٹس دیپانکر دتا اور جسٹس مادھو جمدار پرمشتمل بنچ درخواست پر سماعت کی ۔ چیف جسٹس دیپانکردتا نے ریماکس دیئے کہ اشتہارت پرپابندی کیلئے ریاستی حکومت قوانین مرتب کرے گی۔

 

انہوں نے کہا کہ قانون سازی مقننہ کاکام ہے عدلیہ کا نہیں ۔ کچھ لوگوں کی خواہشات کیلئے عدالت سب لوگوں کو نظر انداز نہیں کرسکتی۔

تبصرے بند ہیں.