سول ایوی ایشن اتھارٹی نے ہوابازوں کی ڈیوٹیز میں کمی کے احکامات جاری کر دئیے

4

اسلام آباد: سول ایوی ایشن اتھارٹی (سی اے اے) نے کسی بڑے نقصان سے بچنے کیلئے ہوابازوں کی ڈیوٹیز میں کمی کرنے کے احکامات جاری کر دئیے ہیں۔ 
تفصیلات کے مطابق گزشتہ 7 ماہ کے دوران پاکستان انٹرنیشنل ائیرلائنز (پی آئی اے) کے کپتانوں نے سول ایوی ایشن قوانین کی خلاف ورزی کی جبکہ دیگر آپریٹرز کے مقابلے زیادہ ڈیوٹیاں کیں جس کے باعث متعدد پروازیں تاخیر کا شکار ہوئیں اور مسافروں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑا۔ 
ذرائع کا کہنا ہے کہ ایک سال کے دوران 55 پروازوں میں کپتانوں سے 12 گھنٹے سے زائد ڈیوٹی کروائی گئی جو قوانین کی سنگین خلاف ورزی ہے جبکہ اس وجہ سے مسافروں کی حفاظت کو بھی خطرات لاحق ہیں۔ 
سول ایوی ایشن کا کہنا ہے کہ ڈیوٹیز سے متعلق ایس اوپیز واضح ہیں، ہوابازوں کی مسلسل ڈیوٹیز کسی بڑے نقصان کا سبب بن سکتی ہے جبکہ ترجمان پی آئی اے کا کہنا ہے کہ سول ایوی ایشن کا خط موصول ہوگیا ہے اور اس کا جائزہ لے رہے ہیں۔ 
واضح رہے کہ گزشتہ دنوں قومی فضائی کمپنی کے عملے کے ایک رکن نے کراچی سے اسلام آباد جانے والی پرواز میں غلطی سے ایمرجنسی سلائیڈ کھول دی جس کے بعد پی آئی اے انتظامیہ نے واقعے کی تحقیقات شروع کی تھیں۔
ذرائع کا کہنا تھا کہ پی آئی اے پروازوں پر ڈیوٹی دینے والے عملے کے ارکان اضافی ڈیوٹیوں کے باعث ذہنی و جسمانی تھکاوٹ کے سبب سنگین نوعیت کی غلطیاں کررہے ہیں۔ 
گزشتہ ہفتے پیر کی صبح کراچی سے اسلام آباد کی پرواز پی کے 300 پر ڈیوٹی دینے والے کیبن کریو نے رن وے پر اڑان سے کچھ دیر قبل غلطی سے ہنگامی سلائیڈ کھول دی تھی۔ 

تبصرے بند ہیں.