نئے آرمی چیف کی تقرری میرٹ پر ہوگی، عمران خان کا بیان حب الوطنی کے خلاف ہے: احسن اقبال 

31

 

اسلام آباد: وزیر منصوبہ بندی احسن اقبال نے کہا ہے کہ نئے آرمی چیف کی تقرری وقت پر ، میرٹ اور قانون کے مطابق کی جائے گی۔ سابق وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے معاملے کو سیاسی رنگ دینے اور فوج میں دراڑیں پیدا کرنے کی مبینہ کوششیں "افسوس ناک  اور انتہائی غیر محب وطن” ہیں۔ 

 

وفاقی وزیر احسن اقبال نے عرب نیوز کو انٹرویو میں کہا کہ آرمی چیف کی تقرری کے لیے آئین میں ایک طریقہ کار موجود ہے۔ جب وقت آئے گا، اسے معمول کے مطابق، قانون کے مطابق اور میرٹ پر بنایا جائے گا۔ سب کو فوج میں تقسیم پیدا کرنے کی کوشش کرنے کے بجائے اس طریقہ کار پر بات کرنی چاہیے۔  محب وطن جرنیل اور غیر محب وطن جرنیل کی بات شرمناک ہے۔

 

احسن اقبال کا کہنا تھا کہ پاکستان کی فوج پاکستان کی سلامتی کا ایک بہت اہم ادارہ ہے ۔ بدقسمتی سے عمران خان نے فوج کو بھی سیاسی رنگ دینے کی کوشش کی اور اب آرمی چیف کی تقرری پر بھی سیاست کر رہے ہیں۔ یہ انتہائی افسوسناک اور انتہائی غیر محب وطن ہے۔

 

سیلاب سے ہونے والے نقصانات کے بارے میں بات کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہا کہ نقصانات کا ابتدائی تخمینہ 30 بلین ڈالر سے زیادہ ہے لیکن حتمی اعداد و شمار مکمل ہونے کے بعد واضح ہو جائیں گے جو اقوام متحدہ، ورلڈ بینک اور ایشیائی ترقیاتی بینک کے تعاون سے کیا جا رہا ہے۔

 

وزیرمنصوبہ بندی نے کہا کہ انفراسٹرکچر کی تعمیر نو اور لوگوں کے کھروں کی تعمیر کے لیے دو سے تین سال کی کوششیں درکار ہوں گی۔  اقوام متحدہ ایک ڈونر کانفرنس کی حمایت کرے گا تاکہ پاکستان کو بحالی اور تعمیر نو کے لیے بین الاقوامی فنڈز کو متحرک کرنے میں مدد ملے۔

تبصرے بند ہیں.