پی ڈی ایم قیادت کیخلاف مقدمات درج کرنے کا خیبرپختونخواہ حکومت کا فیصلہ معطل

9

پشاور: پشاور ہائیکورٹ نے پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) قیادت کے خلاف مقدمات درج کرنے سے متعلق خیبرپختونخوا حکومت کا فیصلہ معطل کر دیا ہے۔ 
تفصیلات کے مطابق پشاور ہائیکورٹ کے جسٹس وقار اور جسٹس شاہد نے صوبائی حکومت کی جانب سے پی ڈی ایم قیادت کے خلاف مقدمات درج کرنے سے متعلق کیس کی سماعت کی۔
درخواست گزار نے موقف اختیار کیا کہ سیاسی مقاصد کیلئے سی آر پی سی کے سیکشن 196 کا غلط استعمال کیا گیا، سیکشن 196 کسی افسر کو ایف آئی آر درج کرنے کا اختیار نہیں دیتا۔ عدالت نے خیبر پختونخوا حکومت کا اعلامیہ معطل کر کے صوبائی حکومت کو نوٹس جاری کر دیا۔
واضح رہے کہ خیبر پختونخوا حکومت نے صوبائی کابینہ کی منظوری کے بعد اداروں کے خلاف ہرزہ سرائی کرنے پر پی ڈی ایم قیادت کے خلاف مقدمات کیلئے ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر ڈی آئی خان کو اختیارات دئیے تھے۔ 
بعد ازاں انہوں نے نواز شریف، آصف علی زرداری، مولانا فضل الرحمن کے خلاف مقدمہ درج کرائے تھے جبکہ ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر ڈی آئی خان نے وزیر داخلہ رانا ثنااللہ اور کیپٹن (ر) صفدر اعوان کے خلاف بھی مقدمہ درج کیا تھا۔

تبصرے بند ہیں.