قطر کیساتھ تاریخی دو طرفہ روابطہ کو موثر سٹریٹجک تعلقات میں بدلنا چاہتے ہیں: وزیراعظم

37

اسلام آباد: وزیراعظم شہباز شریف نے کہا ہے کہ قطر کے ساتھ تاریخی دوطرفہ روابط کو اور بھی زیادہ موثر سٹرٹیجک تعلقات میں تبدیل کرنا چاہتے ہیں۔ 
تفصیلات کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری پیغام میں کہا کہ اپنے بھائی عزت مآب شیخ تمیم بن حمد آل ثانی کی دعوت پر آج قطر روانہ ہو رہا ہوں۔ 
انہوں نے لکھا کہ میرے اس دورے سے دونوں ممالک کے درمیان دوستی اور بھائی چارے کے تعلق کی تجدید ہو گی جبکہ قطر کے ساتھ تاریخی دوطرفہ روابط کو اور بھی زیادہ موثر سٹرٹیجک تعلقات میں تبدیل کرنا چاہتے ہیں۔ 

شہباز شریف نے کہا کہ کاروباری برادری سے ملاقاتوں میں انہیں پاکستان میں سرمایہ کاری کے پرکشش مواقع کے بارے میں آگاہ کروں گا جن میں قابل تجدید توانائی، فوڈ سکیورٹی، صنعت و انفراسٹرکچر کی ترقی، سیاحت اورمہمان نوازی کے شعبے شامل ہیں۔

وزیراعظم شہباز شریف کا مزید کہنا تھا کہ قطر کے دورے کے تناظر کو سمجھنا اہم ہے، کورونا وبا کے بعد دنیا معاشی سست روی سے بحالی کی طرف جا رہی ہے۔ جیو پولیٹیکل کشیدگیوں نے طلب اور رسد کا عمل متاثر اور توانائی اور خوراک کی قیمتوں میں اضافے نے مسائل میں اضافہ کیا ہے، یہ مشترکہ چیلنجز متقاضی ہیں کہ تعاون کی نئی راہیں ڈھونڈی جائیں۔ 

واضح رہے کہ وزیراعظم شہباز شریف امیر قطر کی دعوت پر آج قطر کے سرکاری دورے پر روانہ ہوں گے اور کابینہ کے اہم ارکان سمیت ایک اعلیٰ سطح کا وفد بھی ان کے ہمراہ ہو گا۔ 
دفتر خارجہ کے ترجمان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم شہباز شریف کے دورہ قطر کے دوران توانائی، تعاون، تجارتی اور سرمایہ کاری کے تعلقات کو گہرا کرنے پر بات چیت کی جائے گی۔ 
ان کا کہنا تھا کہ قطر میں پاکستانیوں کیلئے روزگار کے وسیع مواقع تلاش کرنے پر بھی توجہ دی جائے گی جبکہ شہباز شریف کو فیفا ورلڈکپ کی تیاریوں پر بریفنگ بھی دی جائے گی۔ 
ترجمان کے مطابق وزارت عظمیٰ کا منصب سنبھالنے کے بعد وزیراعظم شہباز شریف کا قطر کا یہ پہلا دورہ ہو گا جو 24 اگست کو مکمل ہو جائے گا۔

تبصرے بند ہیں.