وزارت داخلہ نے عمران خان کی گرفتاری کیلئے وزیراعظم آفس سے تحریری اجازت مانگ لی

431

اسلام آباد: وزارت داخلہ نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان کی گرفتاری کیلئے وزیراعظم آفس سے تحریری اجازت مانگ لی ہے۔ 
تفصیلات کے مطابق عمران خان کے خلاف دہشت گردی ایکٹ کے تحت مقدمہ درج ہے جس میں گرفتاری کا امکان بھی ہے اور یہی وجہ ہے کہ رات سے ہی پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے بنی گالہ جانے والے تمام راستے بند کر دئیے ہیں جبکہ پی ٹی آئی کے کارکنان بھی بڑی تعداد میں بنی گالہ چوک پر موجود ہیں۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ وزارت داخلہ نے عمران خان کی گرفتاری کیلئے وزیراعظم آفس سے تحریری اجازت مانگ لی ہے اور عمران خان کی گرفتاری کا وارنٹ آئی جی اسلام آباد کے پاس پہنچ چکا ہے۔
ذرائع کے مطابق عمران خان ممکنہ گرفتاری سے بچنے کیلئے بنی گالہ میں موجود نہیں ہیں اور وہ خیبر پختونخوا یا لاہور جا چکے ہیں تاہم پی ٹی آئی رہنما فیصل واوڈا کا کہنا ہے کہ عمران خان بنی گالہ میں ہی موجود ہیں۔

دوسری جانب ذرائع کا کہنا ہے کہ عمران خان کی گرفتاری حکومتی اتحادیوں کے اتفاق رائے سے عمل میں لائی جائے گی اور اس حوالے سے حکومتی اتحادیوں مشاورت جاری ہے۔
ذرائع کے مطابق سابق صدر آصف علی زرداری عمران خان کی گرفتاری کے حق میں نہیں ہیں اور سمجھتے ہیں کہ ایسا کرنے سے سیاسی نقصان ہو گا جبکہ پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) کے سربراہ مولانا فضل الرحمن اس حوالے سے واضح موقف اختیار کرنے سے گریزاں ہیں۔ 

تبصرے بند ہیں.