آصف علی زرداری کا پیٹرول کی قیمت میں اضافے پر تشویش کا اظہار

79

اسلام آباد: پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے شریک چیئرمین اور سابق صدر آصف علی زرداری نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے پر تشویش کا اظہار کر دیا۔ 
تفصیلات کے مطابق حکومت کی اتحادی جماعت پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف زرداری نے اپنے بیان میں کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی حکومت کا حصہ ہے اور ساتھ ہے، اس طرح کے فیصلوں پر مشاورت ضرور ہونی چاہیے۔
ان کا کہنا تھا کہ ہم سب اس حکومت میں عوام کو ریلیف دینے آئے ہیں اور عوام کو ریلیف دینا ہی ہماری اولین ترجیح ہونی چاہیے، ہم وزیراعظم کے ساتھ ہیں اور جلد ان سے ملاقات کروں گا جس میں معاشی ٹیم کے بارے میں بھی بات ہو گی۔
واضح رہے کہ اس سے قبل پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز شریف بھی اپنے بیان میں کہہ چکی ہے کہ وہ پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے فیصلے کی تائید نہیں کر سکتیں جبکہ نواز شریف بھی سخت ناراض ہیں۔ 
یاد رہے کہ حکومت نے گزشتہ روز پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ردوبدل کرتے ہوئے پیٹرول کی قیمت میں 6 روپے 72 پیسے فی لیٹر اضافہ کیا ہے جبکہ ڈیزل کی قیمت میں 51 فیصد کمی کی گئی ہے جس کے بعد اسے خاصی تنقید کا سامنا ہے۔ 
اس ضمن میں جاری کئے گئے نوٹیفکیشن کے مطابق 6 روپے 72 پیسے اضافے کے بعد پیٹرول کی نئی قیمت 233 روپے 91 پیسے فی لیٹر ہو گئی ہے جبکہ ہائی سپیڈ ڈیزل کی قیمت 51 پیسے کمی کے بعد 244 روپے 44 پیسے فی لیٹر ہو گئی ہے۔
مٹی کا تیل 1 روپے67 پیسے فی لیٹر کمی کے بعد 199 روپے 44 پیسے فی لیٹر ہو گیا ہے جبکہ لائٹ ڈیزل کی قیمت میں 43 پیسے فی لیٹر کا اضافہ ہوا ہے جس کے بعد اس کی نئی قیمت 191 روپے 75 پیسے فی لیٹر مقرر کی گئی ہے۔ 
صارفین کا کہنا ہے کہ عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں کمی جبکہ پاکستان میں ڈالر کی قدر میں نمایاں کمی کے باوجود پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ پریشان کن ہے جبکہ گزشتہ مہینے بجلی کے بلوں نے بھی عوام کی جان عذاب کئے رکھی ہے۔ 

تبصرے بند ہیں.