’امپورٹڈ حکومت بچانے کیلئے پوری ڈھٹائی سے آئین و قوانین پامال کئے جا رہے ہیں‘

21

اسلام آباد: چیئرمین پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) عمران خان نے کہا ہے کہ امپورٹڈ حکومت بچانے کیلئے پوری ڈھٹائی سے آئین و قوانین پامال کئے جا رہے ہیں ۔

 

اپنی ٹویٹ میں سابق وزیر اعظم نے کہا کہ ‏شہباز گل پر کئے جانے والے جسمانی تشدد کی مذمت کرتا ہوں ۔ کس قانون کے تحت اور کس کے احکامات پر اسے نشانہ ستم بنایا جا رہا ہے ؟ اگر اس نے کوئی قانون توڑا ہے تو اسے صفائی پیش کرنے کا موقع دیا جانا چاہیے ۔

ادھر فواد چودھری نے بھی اپنی ٹویٹ میں شہباز گل پر ہونے والے تشدد کی مذمت کی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ شہباز گل کے جسم پر تشدد کے نشان ظلم کی اس داستان کی گواہی ہیں ۔ ریمانڈ مسترد ہونے کے باوجود شہباز کو جیل نہیں بھیجا گیا ابھی تک منشی خانے میں ہے ۔ اب نئی سازش سوچی جا رہی ہے ۔

فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ شہباز گل کے اوپر دوران تفتیش پولیس کا تشدد نا قابل برداشت ہے ۔ عمران خان اور پی ٹی آئی قائدین ہر قسم کا ظلم برداشت کرنے کو تیار ہیں ۔ امپورٹڈ حکومت جتنا مرضی ظلم ، جبر اور استبداد کر لے حقیقی آزادی کا رستہ نہیں روک سکتی ۔

 

انہوں نے کہا کہ شہباز گل کی گرفتاری کئی سوالیہ نشان کھڑے کر گئی ہے ۔ عوام ایاز صادق ، جاوید لطیف ، خواجہ آصف ، بیگم صفدر اعوان کی گرفتاری کی منتظر ہے ۔

 

فیاض الحسن چوہان نے کہا کہ 13 اگست کو لاہور میں پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا جلسہ ہوگا ۔ جلسے میں عمران خان حقیقی آزادی بارے انتہائی اہم پالیسی کا اعلان کریں گے ۔ عمران خان کا مقصد پاکستان کی عوام کو حقیقی آزادی دلانا ہے ۔

 

واضح رہے کہ اداروں کے خلاف اکسانے کے کیس میں عدالت نے شہباز گل کے مزید جسمانی ریمانڈ کی استدعا کو مسترد کر دیا ہے ۔ ڈیوٹی مجسٹریٹ عمر شبیر نے محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے شہباز گل کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیجنے کا حکم دیدیا ۔

 

 

 

 

 

 

تبصرے بند ہیں.