رانا ثناءاللہ کو ماڈل ٹاؤن میں قتل عام کا حساب دینا ہو گا: مونس الہٰی

21

لاہور: مسلم لیگ ق کے رہنما مونس الہٰی نے کہا ہے کہ رانا ثناءاللہ کو ماڈل ٹاؤن میں قتل عام کا حساب دینا ہو گا ۔

 

اپنی ٹویٹ میں مونس الٰہی نے وزیر داخلہ کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ رانا صاحب 24 گھنٹے بھی نہیں ہوئے چوہدری پرویز الہٰی کو حلف لیے اور آپ کی ہوائیاں پہلے ہی اڑ گئی ہیں ۔

 

انہوں نے مزید کہا کہ گورنر رُول کے بارے میں احمقانہ بیان دینے سے پہلے آئین پڑھ لیں ۔ ابھی تو ماڈل ٹاؤن میں جو قتل عام آپ نے کیا تھا اس کا حساب دینا ہے ۔

واضح رہے کہ وفاقی وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ نے پنجاب میں گورنر راج لگانے کی دھمکی دی تھی ، اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے انہوں نے کہا تھا کہ اگر پنجاب میں میرا داخلہ بند کیا گیا تو گورنر راج کیلئے یہ جواز کافی ہوگا ۔

 

انہوں نے مزید کہا کہ وزارت داخلہ نے گورنر راج لگانے کی سمری کی تیاری شروع کر دی ہے ، بحیثیت وکیل سپریم کورٹ کے کل کے فیصلے پر افسردہ ہوں ، موجودہ صورتحال پوری قوم کے لئے لمحہ فکریہ ہے ۔

 

دوسری جانب ، وفاقی وزیر قانون اعظم نذیر تارڑ نے پنجاب میں گورنر راج کے نفاذ کی تردید کر دی ، کہتے ہیں عدلیہ کے جو اختیارات ہیں وہی رہیں گے ۔

 

صحافی نے اعظم نذیر تارڑ سے سوال کیا کہ پنجاب میں گورنر راج نافذ کرنے جارہے ہیں ؟ جس پر وزیر قانون بولے ایسی کوئی بات نہیں ، پنجاب میں وزرا کے داخلے روکے جائیں گے تو گورنر راج کا جواز بنے گا ۔ پارلیمان اپنے اختیارات کا آئینی طور پر تحفظ جانتی ہے ۔

 

 

 

 

 

 

تبصرے بند ہیں.