صحافی عمران ریاض خان جوڈیشل ریمانڈ پر پولیس کے حوالے

30

چکوال: عدالت نے معروف صحافی عمران ریاض خان کو جوڈیشل ریمانڈ پر پولیس کے حوالے کر دیا ہے۔ 
تفصیلات کے مطابق چکوال کے مجسٹریٹ کی عدالت میں صحافی عمران ریاض کو پیش کیا گیا اور پولیس نے ان کا جسمانی ریمانڈ دینے کی استدعا کی جسے مسترد کرتے ہوئے جوڈیشل ریمانڈ دیا گیا۔ 
عمران ریاض کے وکیل علی اشفاق ایڈووکیٹ نے دلائل دیتے ہوئے کہا ریاست کی ایک پالیسی پر اعتراض کی قیمت مشکوک افراد کے ذریعے 18 ایف آئی آرز کی صورت میں سامنے آئی، عمران ریاض کی پوری تقریر میں اداروں کے خلاف کوئی بات نہیں۔
وکیل نے دلائل پیش کرتے ہوئے کہا یہ کیس عمران ریاض خان کا نہیں بلکہ عدلیہ کی عزت اور وقار کا ہے کہ جج صاحبان آزادانہ فیصلے کرتے ہیں یا نہیں؟ جبکہ سرکاری وکیل نے دلائل دیتے ہوئے کہا آئین اداروں سے اختلاف رائے کی اجازت نہیں دیتا۔
عمران ریاض خان نے عدالت کے روبرو اپنے بیان میں کہا کہ مجھے رجیم چینج سیمینار میں کی گئی اپنی تقریر پر کوئی افسوس نہیں اور میں اپنی بات پر قائم ہوں۔پٹرول مہنگا ہے لیکن پولیس کی 10گاڑیاں میرے ساتھ سفر کرتی ہیں، سرکاری وسائل کا بے دریغ استعمال کیا جا رہا ہے۔
پولیس کی جانب سے صحافی عمران ریاض کے جسمانی ریمانڈ کیلئے استدعا کی گئی تاہم عدالت نے صحافی کے دلائل مکمل ہونے پر جسمانی ریمانڈ کی استدعا مسترد کرتے ہوئے جوڈیشل ریمانڈ دیا جس کے بعد لاہور پولیس عمران ریاض خان کو لے کر روانہ ہو گئی۔

تبصرے بند ہیں.