الیکشن کمیشن کو پنجاب اسمبلی کی مخصوص نشستوں پر نوٹیفکیشن جاری کرنے کی ہدایت

51

لاہور: لاہور ہائیکورٹ نے پنجاب اسمبلی کی مخصوص نشستوں پر ارکان کا نوٹیفکیشن نہ کرنے کے خلاف پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی درخواست پر الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کو نوٹیفکیشن جاری کرنے کی ہدایت کر دی ہے۔ 
تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس شاہد وحید نے پنجاب اسمبلی کی مخصوص نشستوں پر ارکان کا نوٹیفکیشن نہ کرنے کے خلاف درخواست پر سماعت کی جس دوران پی ٹی آئی کی جانب سے بیرسٹر علی ظفر نے عدالت کے روبرو دلائل پیش کرتے ہوئے کہا کہ الیکشن کمیشن مخصوص نشستوں پرنوٹیفکیشن جاری نہیں کر رہا۔ 
بیرسٹر علی ظفر نے کہا کہ منحرف ارکان کوڈی سیٹ کرنے کے بعد الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) نوٹیفکیشن جاری کرنے کا پابند ہے، جنرل سیٹ کے تناسب سے فہرست کے مطابق نوٹیفکیشن کیا جاتا ہے لہٰذا الیکشن کمیشن سیاسی جماعتوں کی دی گئی فہرست تبدیل نہیں کر سکتا۔ 
پی ٹی آئی کے وکیل نے مزید کہا کہ ہم نے الیکشن کمیشن کو اس پرنوٹیفکیشن جاری کرنے کا کہا مگر الیکشن کمیشن نے جواب دیا کہ 20 سیٹیں خالی ہوئی ہیں جس کے باعث پارٹیوں کی مجموعی نشستیں بھی تبدیل ہوئی ہیں تاہم الیکشن کمیشن کا یہ موقف قانون کے خلاف ہے۔ 
پی ٹی آئی وکیل کے دلائل پر ایڈووکیٹ جنرل نے موقف اختیار کیا کہ مخصوص نشستوں پرنوٹیفکیشن جنرل الیکشن کے بعد ہوتا ہے، اب 20 نشستوں کی وجہ سے سیاسی جماعتوں کی پوزیشن بدل گئی ہے، میرا تو خیال تھا کہ یہ لارجر بینچ کا معاملہ ہے۔
بعد ازاں عدالت نے پنجاب اسمبلی کی مخصوص نشستوں کا نوٹیفکیشن نہ کرنے کے خلاف پی ٹی آئی کی درخواست منظور کر لی اور الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) کو مخصوص نشستوں پرنوٹیفکیشن جاری کرنے کی ہدایت دی ہے۔ 

تبصرے بند ہیں.