سعودی عرب کا 25 روز تک عمرہ ادائیگی عازمین حج تک محدود کرنے کا فیصلہ

23

ریاض: سعودی وزارت حج و عمرہ نے کہا ہے کہ 25 روز تک عازمین حج کے علاوہ کسی کو بھی عمرہ ادائیگی کی اجازت نہیں ہو گی۔ 
غیر ملکی خبررساں ایجنسی کی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ سعودی حکومت کے اعلان کے مطابق 25 روز کے دوران مناسک عمرہ کو صرف حجاج تک محدود رکھا جائے گا تاکہ عازمین حج کو سہولیات مہیا کی جاسکیں۔
دوسری جانب مسجد حرام میں معاون جنرل صدر ڈاکٹر سعد بن محمد نے حج سیزن 1443 ہجری کی اہم ترین تیاریوں کو حتمی شکل دینے کا اعلان کیا ہے جبکہ وزارت حج نے عندیہ دیا ہے کہ عمرہ ادائیگی کیلئے ریزرویشن دوبارہ ’عتمرنا ایپ‘ کے ذریعے 20 ذی الحجہ 1443 ہجری بروز منگل سے ممکن ہو گی۔
واضح رہے کہ پاکستانی عازمین حج کے علاوہ دیگر ممالک کے حجاج کرام مناسک حج کی ادائیگی کیلئے سعودی عرب پہنچ چکے ہیں اور وزارت حج عمرہ کی جانب سے 25 روز تک عمرہ ادائیگی پر پابندی کا فیصلہ بھی عازمین حج کی سہولت کیلئے کیا گیا ہے۔ 
گزشتہ دنوں سعودی حکومت نے غلاف کعبہ کو زمین سے 3 میٹر اوپراٹھا دیا تھا اور خانہ کعبہ کے گرد احرام کی علامت کے طورپر سفید کپڑا لپیٹ دیا گیا ہے، خانہ کعبہ کے گرد سفید کپڑا ڈھانپ کر علامتی طور پر حج سیزن کے آغاز کا اعلان بھی کیا جاتا ہے۔

تبصرے بند ہیں.