ڈاکٹرز نے سابق صدر پرویز مشرف کو فضائی سفر سے منع کر دیا

12

 اسلام آباد: سابق صدر پرویز مشرف کو ڈاکٹروں نے سفر کرنے سے منع کر دیا ہے جس کے باعث خواہش کے باوجود پرویز مشرف جلد وطن واپسی کا کوئی امکان نہیں ہے۔ 
تفصیلات کے مطابق سابق صدر کی بات کرتے ہوئے سانس اکھڑتی ہے جبکہ متحدہ عرب امارات (یو اے ای) کی حکومت انہیں بوئنگ 777 فراہم کرنے کی تیاری کررہی ہے لیکن پرویز مشرف کا جلد وطن واپسی کا کوئی منصوبہ نہیں ہے کیونکہ ڈاکٹروں نے انہیں فضائی سفر سے اجتناب کرنے کا مشورہ دیا ہے۔ 
ذرائع کا کہنا ہے کہ یو اے ای کی حکومت انہیں بوئنگ 777 طیارے کو ائیر ایمبولینس بنا کر انہیں فراہم کرنے کو تیار ہے جس میں وہ تمام آلات اور سہولیات میسر ہوں گی جو پاکستان منتقل ہونے کیلئے ضروری ہیں تاہم اس کے باوجود ڈاکٹرز کا کہنا ہے کہ پرویز مشرف کو فضائی سفر نہیں کرنا چاہئے۔ 
پرویز مشرف کے پرنسپل سیکرٹری اور نیشنل سیکیورٹی کونسل کے سیکرٹری جنرل کے عہدوں پر فائز رہنے والے طارق عزیز کا کہنا ہے کہ جنرل (ر) پرویز مشرف اور ان کی اہلیہ بیماری سے زیادہ تنہائی سے پریشان ہیں جس کے باعث سابق صدر وطن واپس آنا چاہتے ہیں مگر ڈاکٹروں کی رائے آڑے آ گئی ہے۔ 
ذرائع کا کہنا ہے کہ سابق صدر کے گھر والوں نے تمام اختلافات کو بالائے طاق رکھ کر پرویز مشرف کی صحت یابی کی دعائیں کرنے والوں کیساتھ اظہار تشکر بھی کیا ہے جبکہ سابق صدر ہر وقت پاکستان کیلئے دعاگو بھی رہتے ہیں۔

تبصرے بند ہیں.