عمران خان نے حکومت کو 6 دن کی ڈیڈ لائن دیدی

222

اسلام آباد: چیئرمین پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) عمران خان نےحکومت کو اسمبلیاں تحلیل کرنے اور چھ دن میں الیکشن کی تاریخ دینے کی ڈیڈلائن دیدیا، کہا کہ اگر  انہوں نے چھ دن میں الیکشن کا اعلان نہ کیا تو بیس لاکھ لوگ لیکر آؤں گا۔  سپریم کورٹ نے احتجاج کرنے اور رکاوٹ نہ ڈالنے کا حکم دیا ہے اگلی بار لوگوں کو لیکر آؤں گا تو پھر روک بھی نہیں سکو گے۔

 

تفصیلات کے مطابق پی ٹی آئی کا قافلہ عمران خان کی قیادت میں جناح ایونیو پہنچ گیا جہاں پی ٹی آئی چیئر مین کے عوام سے خطاب کے بعد  تحریک انصاف کا مارچ اختتام پذیر ہو گیا۔

اپنے خطاب میں سابق وزیراعظم نے کہا کہ آزادی کی تحریک کو ناکام کرنے  اور پر امن احتجاج پر آنسو گیس کی شیلنگ کی گئی لیکن میں نے دیکھا عوام خوف سے آزاد ہوگئی  جس طرح آنسو گیس کا مقابلہ کیا اس کی مثال نہیں ملتی ،   یہ لوگ ہماری پارٹی کو ممی ڈیڈی کہتے تھے ۔عمران خان کا کہنا تھا کہ میں ہمیشہ فیملیز کو اپنے جلسوں میں بلاتا ہوں ، ہماری آزادی کی تحریک میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں، خواتین کو سلام پیش کرتا ہوں  ۔

 

عمران خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ 20گھنٹے میں کنٹینر پر خیبرپختونخوا سے اسلام  آباد پہنچا ہوں، آزادی کی تحریک کو ناکام کرنے کیلئے ہر کوشش کی گئی ۔ سابق وزیراعظم نے کہا کہ خوف دیاجاتا تھا امریکا کی مددکے بغیر اقتدار میں نہیں آسکتے ، ڈرایا جاتا تھا کہ امریکا نے پیسے نہ دیئے تو پاکستان کا دیوالیہ نکل جائے گا۔ عمران خان نے کہا کہ امریکی سازش کے تحت ہم پر امپورٹڈ حکومت مسلط کی گئی ۔آدھی سے زیادہ کابینہ ضمانت پر ہے جسے سزا ہونی تھی اسے سب سے بڑے عہدے پر بٹھایا گیا ، اس کے بیٹے کو وزیر اعلی بنادیا گیا،اس سے بڑی اس قوم کی توہین کیا ہوگی؟

 

 

پی ٹی آئی چیئر مین  نے سپریم کورٹ سے سوال کرتے ہوئے کہا کہ  بتائیں ہم کون ساجرم کررہے ہیں؟ کیا پرامن احتجاج ہمارا حق نہیں ہے ؟میں سپریم کورٹ اور وکلا سے انصاف چاہتا ہوں۔

تبصرے بند ہیں.