الیکشن کمیشن نے پی ٹی آئی کے 25 منحرف ارکان کو ڈی سیٹ قرار دیدیا

39

اسلام آباد: الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے منحرف ارکان کے خلاف ریفرنس منظور کرتے ہوئے تمام 25 ارکان کو ڈی سیٹ کر دیا ہے۔
تفصیلات کے مطابق چیف الیکشن کمشنر سکندر سلطان راجہ نے محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ منحرف ارکان پنجاب اسمبلی سے متعلق فیصلہ اتفاق رائے سے کیا گیا ہے۔
الیکشن کمیشن کے فیصلے کے مطابق پی ٹی آئی کے منحرف ارکان کے خلاف ریفرنس منظور کر لیا گیا ہے اور یوں پی ٹی آئی کے منحرف ہونے والے 25 ارکان پنجاب اسمبلی ڈی سیٹ قرار دیدئیے گئے ہیں۔
پی ٹی آئی کے ڈی سیٹ ہونے والے ارکان پنجاب اسمبلی ایک مہینے کے دوران الیکشن کمیشن کے فیصلے کے خلاف اپیل کر سکتے ہیں جبکہ سپریم کورٹ آف پاکستان 90 روز میں اپیل پر فیصلہ کرنے کی پابند ہے۔
واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) نے 25 منحرف اراکین پنجاب اسمبلی کے خلاف ریفرنس بھیجا تھا جس کا فیصلہ الیکشن کمیشن نے سماعت کے بعد منگل کو محفوظ کیا تھا جو آج سنایا گیا ہے۔
پی ٹی آئی کے جو 25 ارکان اسمبلی ڈی سیٹ قرار دئیے گئے ہیں ان میں سعید اکبر خان، محمد اجمل، ملک غلام رسول، نذیر احمد چوہان، عبدالعلیم خان، محمد امین ذوالقرنین، محمد سلمان، ملک نعمان لنگڑیال اور زوار حسین وڑائچ شامل ہیں۔
الیکشن کمیشن کی جانب سے ڈی سیٹ قرار دئیے گئے ارکان میں ہارون عمران گل، ساجدہ یوسف، عائشہ نواز، محمد طاہر، ملک اسد علی، عظمیٰ کاردار، محمد سبطین رضا، اعجاز مسیح، محسن عطاءخان کھوسہ، مہر محمد اسلم، میاں خالد محمود اور فیصل حیات کے نام بھی شامل ہیں۔

تبصرے بند ہیں.