بجلی کا شارٹ فال 6,580 میگاواٹ، 12 سے 16 گھنٹے لوڈشیڈنگ جاری

4

اسلام آباد: گرمی کے ستائے عوام کیلئے بری خبر ہے کہ ملک بھر میں بجلی کا شارٹ فال بڑھ کر 6 ہزار 580 میگاواٹ ہو گیا ہے جس کے باعث مختلف شہروں میں 12 سے 16 گھنٹے تک لوڈشیڈنگ کی جا رہی ہے۔ 
تفصیلات کے مطابق پاور ڈویژن ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ ایندھن کی کمی کے باعث بجلی کی پیداوار 19 ہزار 420 میگاواٹ اور طلب 26 ہزار میگا واٹ سے زائد ہے جبکہ بجلی کا شارٹ فال بڑھ کر 6 ہزار580 میگاواٹ ہو گیا ہے جس کے باعث اعلانیہ و غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری ہے۔ 
ذرائع کا کہنا ہے کہ سرکاری اور نجی پاور پلانٹس کو کوئلے اور ایل این جی کی پوری مقدار نہیں مل رہی اور ایندھن کی اس کمی سے کوئلے اور ایل این جی والے پلانٹس بند ہونے سے بجلی کی پیداوار میں کمی آئی۔ حکومت نے ایل این جی کے سودے کر لئے ہیں اور رسد کیلئے ڈالروں میں ادائیگی ضروری ہے، لیکن ادائیگی نہ ہونے سے ایندھن کی فراہمی نہیں ممکن نہیں ہو سکی۔ 
پاور ڈویژن ذرائع کے مطابق سرکاری تھرمل پاور پلانٹس 1 ہزار 84 میگاواٹ، نجی شعبے کے بجلی گھروں کی پیداوار 10 ہزار 156 میگاواٹ، ہوا سے 700ہزار میگاواٹ، سولر سے 112 میگاواٹ اور بگاس سے چلنے والے پاور پلانٹس سے 166 میگاواٹ بجلی پیدا ہو رہی ہے۔ 
اسی طرح جوہری ایندھن سے بجلی کی پیداوار 2 ہزار 274 میگاواٹ، پن بجلی ذرائع سے 4 ہزار 916 میگاواٹ بجلی پیدا ہو رہی ہے اور ملک میں بجلی پیدا کرنے کی مجموعی صلاحیت 36 ہزار 39 میگاواٹ ہے تاہم شارٹ فال کے باعث عوام کو گرمی کیساتھ ساتھ لوڈشیڈنگ کے عذاب کا بھی سامنا ہے۔ 

تبصرے بند ہیں.