لاہور ہائیکورٹ نے 28 اپریل تک وزیراعلیٰ پنجاب سے حلف لینے کا حکم دیدیا

51

لاہور: لاہور ہائیکورٹ نے نو منتخب وزیراعلیٰ حمزہ شہباز شریف کی درخواست پر فیصلہ سناتے ہوئے 28 اپریل تک حلف کی کارروائی مکمل کرانے کا حکم دیدیا ہے۔ 
تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ نے حمزہ شہباز شریف کی درخواست پر گزشتہ روز محفوظ کیا گیا مختصر فیصلہ سناتے ہوئے گورنر پنجاب کو حلف لینے کیلئے ہدیات جاری کر دی ہیں اور 28 اپریل تک حلف کی کارروائی مکمل کرانے کا حکم دیا ہے۔ 
چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ جسٹس امیر بھٹی نے مختصر فیصلے میں کہا ہے کہ حلف برداری کی تقریب میں بلاجواز تاخیر کی گئی اور صوبہ 25 روز سے وزیراعلیٰ کے بغیر چل رہا ہے جبکہ حلف میں تاخیر آئین کی خلاف ورزی ہے۔ 
چیف جسٹس نے مختصر فیصلے میں ہدایت کی ہے کہ کل تک گورنر پنجاب خود یا کسی نمائندے کے ذریعے وزیراعلیٰ پنجاب سے حلف لیں جبکہ فیصلے کی کاپیاں صدر مملکت، گورنر پنجاب کو ارسال کرنے کا حکم بھی دیا گیا ہے۔ 
واضح رہے کہ گزشتہ روز سماعت کے دوران چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ امیر بھٹی نے ریمارکس دئیے تھے کہ صدر مملکت سو رہے تھے ، عدالت نے اپنے فیصلے سے انہیں جگایا۔ صدر کو اگر سارے معاملے کا علم تھا تو وہ کیوں خاموش تھے؟ صدر، وزیر اعلیٰ کے الیکشن کی قانونی حیثیت کو آئین کے کس آرٹیکل کے تحت دیکھ سکتے ہیں۔
چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ عدالت کو یہ بتا دیں کہ کیا صدر اسے حل کر رہے ہیں؟ صدر کو احساس نہیں ہوسکا کہ صوبے کا کیا کرنا ہے، تو کوئی فیصلہ کر کے بھیج دیتے ہیں۔ عدالتی حکم کا جو حشر ہوا وہ سب کے سامنے ہے، عدالت نے صدر کو یاد کرایا کہ آپ ریاست کے سربراہ ہیں، شاید انہیں سمجھ نہیں آئی۔ 

تبصرے بند ہیں.