تحریک عدم اعتماد پر ووٹنگ ،اٹارنی جنرل نے بڑا دعویٰ کر دیا 

75

اسلا م آباد: اٹارنی جنرل پاکستان  خالد جاوید خان نے کہا ہے کہ پارلیمنٹ میں 3 اپریل کو تحریک عدم اعتماد پر ووٹنگ بغیر کسی رکاوٹ کے قانونی تقاضوں کے مطابق پرامن طریقے سے ہو گی۔

وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کے   بعد ایک انٹرویو میں اٹارنی جنرل نے بتایا کہ وزیراعظم کے خلاف تحریک عدم اعتماد پر ووٹنگ کے انعقاد کے طریقہ کار پر سختی سے عمل کیا جائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ میں نے سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن   کی درخواست پر سماعت کے دوران حکومت کی جانب سے سپریم کورٹ کو پہلے ہی یقین دہانی کرائی ہے اور اس پر سختی سے عمل کیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم کے خلاف تحریک عدم اعتماد پر ووٹنگ کے طریقہ کار پر اس کی روح کے مطابق عمل کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ میں نے وزیر اعظم کے ساتھ بات چیت کی اور پی ٹی آئی کے کارکنوں کی جانب سے 19 مارچ کو سندھ ہاؤس کی خلاف ورزی پر سپریم کورٹ کی ناراضگی سے آگاہ کیا جس پر وزیراعظم نے تسلیم کیا کہ ہجوم کی حکمرانی کے لیے کوئی گنجائش نہیں ہونی چاہیے۔

 جب اٹارنی جنرل پاکستان سے پوچھا گیا کہ کیا وزیراعظم سے ملاقات کے دوران  خفیہ ‘خط’ بھی زیر بحث آیا، تو ان کا کہنا تھا کہ یہ ملاقات موجودہ معاملات سے متعلق قانونی نقطہ نظر پر تبادلہ خیال کے لیے تھی اور اس خط کا ان سے کوئی تعلق نہیں تھا۔

تبصرے بند ہیں.