تحریک عدم اعتماد، ق لیگ اور ایم کیو ایم کی قیادت کے درمیان اہم ملاقات

14

اسلام آباد: مسلم لیگ ق اور ایم کیو ایم کی قیادت کے درمیان ملاقات ، موجودہ سیاسی صورتحال اور عدم اعتماد کی تحریک کے معاملات پر مشاورت ہوئی ۔

 

تفصیلات کے مطابق ، دونوں جماعتوں کی قیادت کی آج اسلام آباد میں ملاقات ہوئی ہے ۔ ملاقات میں دونوں حکومتی اتحادیوں نے مشاورت کے ذریعے حکمت عملی مرتب کرنے پر اتفاق کیا ہے ۔

 

واضح رہے کہ مسلم لیگ ق اور ایم کیوایم کی قیادت سے وزیر اعظم عمران خان الگ الگ ملاقات کر چکے ہیں ۔ ایم کیو ایم کی قیادت لاہور میں چوہدری شجاعت حسین اور چوہدری پرویز الہی سے ملاقات بھی کر چکی ہے ۔

 

اس سے قبل وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے کہا تھا کہ تحریک عدم اعتماد لانے والوں کو دراصل خود پر بھی اعتماد نہیں ۔ تحریک عدم اعتماد اپوزیشن کیلئے گھبراہٹ کا باعث ہوگی ۔

سردار عثمان بزدار سے صوبائی وزراء آشفہ ریاض ، محمد سبطین خان اور رکن پنجاب اسمبلی محمد عبداللہ وڑائچ نے ملاقاتیں کر کے بھرپور اعتماد کا اظہار کیا ۔ اس دوران وزراء سے گفتگو کرتے ہوئے عثمان بزدار نے کہا کہ اپوزیشن کو ایسا سرپرائز ملے گا کہ وہ یاد رکھے گی ۔

 

انہوں نے مزید کہا کہ عوام ماضی میں ملک لوٹنے والوں کو جانتے ہیں ، اپوزیشن کو کسی سطح پر بھی عوام کا اعتماد حاصل نہیں ۔ نا امیدی اپوزیشن رہنماؤں کے چہروں سے جھلک رہی ہے ۔

 

آشفہ ریاض نے کہا کہ ہم ایک ہیں اور ایک رہیں گے ۔ تحریک انصاف کے ہر رکن کو اپنی قیادت پر بھرپور اعتماد ہے ۔ جبکہ سبطین خان نے کہا کہ وزیر اعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار کے ساتھ تھے ، ہیں اور ساتھ رہیں گے ۔ تحریک عدم اعتماد کا جو حشر ہو گا ، دنیا دیکھے گی ۔

 

 

 

تبصرے بند ہیں.