سزائے موت کا سن کا ظاہر جعفر خوف سے کانپ اُٹھا ،کال کوٹھڑی منتقل

71

اسلام آباد: نور مقدم قتل کیس میں سزائے موت پانے والے مجرم ظاہر جعفر کو اڈیالہ جیل میں مجرمان کا لباس پہناتے ہوئے کال کوٹھڑی منتقل کر دیا گیا جبکہ دوسری جانب ظاہر جعفر عدالتی پیشی کے موقع پر خوف سے کانپ رہا تھا، عدالتی فیصلے کے بعد پولیس اہلکار مجرم کو گھسیٹ کر بخشی خانے لے گئے ۔

 

ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج عطا ربانی کی عدالت میں پولیس نے سخت سیکیورٹی میں ظاہر جعفر کو جب لایا توملزم کے چہرے پر خوف نمایاں تھا اور اس کا جسم کانپ رہا تھا اور وہ عدالتی فیصلے کے بعد عدالت سے کچھ کہنا چاہتا تھا لیکن پولیس اہلکار اسے زبردستی روسٹرم سے کھینچ کر بخشی خانے میں لے گئے جہاں سے اسے دیگر مجرمان کے ہمراہ اڈیالہ جیل منتقل کر دیا گیا ۔

 

جیل پہنچتے ہی مجرم کا لباس تبدیل کروایا گیا اور اسے باضابطہ طور پر مجرمان کا لباس پہنایا گیا اور اس کا اتروایا جانے والا لباس اور جوتے اس کی والدہ کے سپرد کر د یئے گئے۔

تبصرے بند ہیں.