محسن بیگ کے جسمانی ریمانڈ میں 2 دن کی توسیع

12

اسلام آباد: انسداد دہشت گردی عدالت اسلام آباد نے صحافی محسن بیگ کے جسمانی ریمانڈ میں 2 دن کی توسیع کر دی ہے۔ 
تفصیلات کے مطابق محسن بیگ کو انسداد دہشت گردی عدالت کے جج محمد علی وڑائچ کے سامنے پیش کیا گیا جس دوران ملزم کے وکیل لطیف کھوسہ بھی عدالت میں پیش ہوئے اور دلائل دیئے۔ عدالت نے محسن بیگ کے جسمانی ریمانڈ میں 2 دن کی توسیع کر دی ہے۔ 
واضح رہے کہ آج اسلام آباد ہائیکورٹ نے محسن جمیل بیگ کے گھر وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی اے ) کے چھاپے کے خلاف درخواست پر سماعت میں ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ یہ عام شکایت ہوتی تب بھی گرفتاری نہیں بنتی تھی۔
اسلام آباد ہائیکورٹ میں محسن بیگ کے گھر ایف آئی اے چھاپے کے خلاف درخواست پر سماعت میں ایف آئی اے کے ڈائریکٹر سائبر کرائم ونگ عدالت میں پیش ہوئے۔ عدالت نے ایف آئی اے سائبر کرائم ونگ کے ڈائریکٹر کو شوکاز نوٹس جاری کرتے ہوئے اگلی سماعت پر اٹارنی جنرل کو بھی طلب کر لیا ہے۔ 
چیف جسٹس اطہر من اللہ نے ریمارکس دئیے کہ ہر کیس میں ایف آئی اے اپنے اختیارات سے تجاوز کر رہا ہے، چیف جسٹس نے ڈائریکٹر سائبر کرائم ونگ سے استفسار کیا کہ آپ کو شکایت کہاں ملی تھی؟ جس پر ڈائریکٹر سائبر کرائم ونگ نے جواب دیا کہ وفاقی وزیر مراد سعید نے 15 فروری کو لاہور میں شکایت درج کرائی تھی۔ 

تبصرے بند ہیں.